عوام یوگی آدتیہ ناتھ کے خلاف ووٹ دیں گے :اسدالدین اویسی

اترپردیش کے دریاؤں اورگورکھپورمیں بھی نعشیں بہہ رہی تھیں، مجھے امید ہے کہ گورکھپورکے عوام اسے یاد رکھیں گے اوریوگی آدتیہ ناتھ کے خلاف اچھا فیصلہ لیں گے۔

نئی دہلی: اترپردیش میں کووڈ19کی دوسری لہر کے دوران اس کامقابلہ کرنے کے طریقہ پر چیف منسٹریوگی آدتیہ ناتھ پرتنقیدکرتے ہوئے آل انڈیامجلس اتحادالمسلمین (اے آئی ایم آئی ایم) کے صدر اسدالدین اویسی نے آج کہاکہ گورکھپورکے عوام اسے یاد رکھیں گے اوریوپی میں آنے والے اسمبلی انتخابات میں یوگی کے خلاف ووٹ دیں گے۔

بی جے پی نے یوگی آدتیہ ناتھ کو ان کے آبائی ضلع گورکھپورسے آنے والے اسمبلی الیکشن میں امیدواربنانے کا فیصلہ کیاہے۔

اویسی نے یہاں نامہ نگاروں کوبتایاکہ کووڈ کی دوسری لہر کے دوران یوگی حکومت عوام کوبے یارومددگار چھوڑتے ہوئے غائب ہوگئی تھی۔

اترپردیش کے دریاؤں اورگورکھپورمیں بھی نعشیں بہہ رہی تھیں، مجھے امید ہے کہ گورکھپورکے عوام اسے یاد رکھیں گے اوریوگی آدتیہ ناتھ کے خلاف اچھا فیصلہ لیں گے۔

یوپی اسمبلی انتخابات کیلئے ان کی پارٹی کی تیاریوں کے بارے میں دریافت کئے جانے پر اے آئی ایم آئی ایم کے صدراورحیدرآباد کے رکن پارلیمنٹ نے کہاکہ وہ پوری طرح تیارہیں اورانتخابی مقابلہ کریں گے۔

الیکشن کمیشن کے قواعد کوملحوظ رکھتے ہوئے پارٹی ورچول ریالیاں منعقد کرے گی۔ انہوں نے کہاکہ پارٹی کی تیاریوں کودیکھتے ہوئے اورگزشتہ چند ماہ کے دوران خود انہوں نے کئی جلسوں سے خطاب کیاہے۔

ایم آئی ایم کے مواقع اس کی وجہ سے روشن ہوں گے۔ان تنقیدوں پرردعمل ظاہرکرتے ہوئے کہ ایم آئی ایم کے حصہ لینے سے اترپردیش میں بی جے پی کو جیتنے میں مدد ملے گی، اویسی نے کہاکہ مجھ پرساری زندگی یہ الزام لگایاجاتا رہے گا۔

انہوں نے سوال کیاکہ 2014،2017اور2019میں اترپردیش میں بی جے پی کیوں کامیاب ہوئی۔میرے سوال کا کوئی بھی جواب نہیں دے رہا ہے کیونکہ یہ”سیکولرجماعتیں“ بی جے پی کوشکست دینے میں ناکام رہیں۔

ان کی مایوسی اورامکانی شکست کو دیکھتے ہوئے مجھ پر ایسے الزامات عائدکئے جارہے ہیں۔ ان میں بی جے پی کوہرانے کی نظریاتی یادانشمندانہ صلاحیت نہیں ہے۔ اسی لئے وہ لوگ مجلس پرالزامات عائد کررہے ہیں۔

ذریعہ
پی ٹی آئی

تبصرہ کریں

Back to top button