غازی پور سرحد سے بیریکیڈس ہٹانا شروع

ڈپٹی کمشنر پولیس (ایسٹ) پرینکا کشیپ نے کہا کہ قومی شاہراہ نمبر 9 سے بیریکیڈس ہٹانے کا عمل شروع ہوگیا ہے۔ عارضی بیریکیڈنگ ہٹائی جارہی ہیں تاکہ گاڑیوں کی آمدورفت میں آسانی پیدا ہو۔

غازی آباد: دہلی پولیس نے دہلی۔ اترپردیش سرحد پر غازی پور میں کسانوں کے مقام احتجاج پر بیریکیڈس کا بڑا حصہ اور خاردار تار ہٹادیئے جہاں احتجاجی جمعہ کے دن بھی ڈٹے رہے۔ دہلی میں کسانوں کے احتجاج کے دوران 26  جنوری کے تشدد کے بعد آہنی رکاوٹیں کھڑی کردی گئی تھیں۔ سمنٹ کے بیریکیڈ لگائے گئے تھے۔

ڈپٹی کمشنر پولیس (ایسٹ) پرینکا کشیپ نے کہا کہ قومی شاہراہ نمبر 9 سے بیریکیڈس ہٹانے کا عمل شروع ہوگیا ہے۔ عارضی بیریکیڈنگ ہٹائی جارہی ہیں تاکہ گاڑیوں کی آمدورفت میں آسانی پیدا ہو تاہم قومی شاہراہ نمبر 24 پہلے سے ٹریفک کے لئے کھلی ہے۔ سڑک کا یہ حصہ کھول دینے سے غازی آباد‘ دہلی اور نوئیڈا کے ہزاروں افراد کو سہولت ہوگی جو قومی دارالحکومت دہلی اور اترپردیش کے اندرونی علاقوں کے درمیان سفر کرتے رہتے ہیں۔

پولیس عہدیداروں نے بتایا کہ غازی پور میں قومی شاہراہ نمبر 9 پر جو کیلیں گاڑھی گئی تھیں انہیں بھی نکال دیا جارہا ہے۔ گزشتہ برس نومبر سے یہاں پر احتجاجی کسان ڈٹے ہوئے ہیں۔ بھارتیہ کسان یونین نے کہا کہ رکاوٹیں پولیس نے کھڑی کی تھیں‘ ہم نے نہیں۔ بی کے یو قائد راکیش ٹکیت نے کہا کہ مستقبل کا لائحہ عمل سمیکت کسان مورچہ طئے کرے گا۔

بیریکیڈس پوری طرح ہٹنے کے بعد کسان دہلی جائیں گے۔ ہم مسئلہ کی یکسوئی کے لئے مرکز سے بات چیت کرنے تیار ہیں۔بی کے یو ترجمان سوربھ اُپادھیائے نے کہا کہ حکومت اگر تعطل دورکرنا چاہتی ہے تو اسے ابھی کسانوں سے بات چیت کرنی چاہئے۔ہم اس کے لئے تیار ہیں۔ اگر وہ چاہتی ہے کہ کسانوں کی تحریک جاری رہے تو اس کے لئے بھی ہم تیار ہیں۔

ذریعہ
پی ٹی آئی

تبصرہ کریں

Back to top button