قرض دینے والے ایپس سے چوکس رہنے تلنگانہ پولیس کا مشورہ

تلنگانہ پولیس نے حال ہی میں بیشتر کمپنیوں کے خلاف معاملات درج کئے ہیں جو غیر قانونی طورپر قرض کی ایپس کے ذریعہ فراہمی کے کاروبارمیں ملوث ہیں۔پولیس نے کئی افراد کو گرفتار بھی کیا ہے جو اس کاروبار میں اہم کردار اداکررہے ہیں۔

حیدرآباد: ایپس کے ذریعہ دیئے جانے والے قرض کے معاملات میں اضافہ کے پیش نظر تلنگانہ پولیس نے عوام کو ایسے ایپس سے چوکس رہنے کا مشورہ دیا ہے۔اپنے بیداری کے پیام میں پولیس نے کہا کہ کئی ایپس، فون پرقرضوں کی پیشکش کررہے ہیں۔عوام جو قرض کے ضرورت مند ہیں، ان اپیس کو اپنے فون میں موجود تمام افراد کے فون نمبرات تک رسائی کی اجازت دے رہے ہیں۔

کمپنی کی جانب سے قرض کے لئے بھاری سود وصول کیاجارہا ہے۔اگر کوئی بھی شخص قرض کی رقم کی ادائیگی میں ناکام ہوتا ہے یا پھر اس میں تاخیر کرتا ہے تو وہ اس کے فون میں محفوظ تمام افراد سے رابطہ کرتے اور ان کو ایس ایم ایس کرتے ہوئے اسے ہر اساں کررہے ہیں۔پولیس نے گوگل پے پر دستیاب ایسے قرض فراہم کرنے والے تقریبا100فرضی ایپس کے نام جاری کئے ہیں۔

تلنگانہ پولیس نے حال ہی میں بیشتر کمپنیوں کے خلاف معاملات درج کئے ہیں جو غیر قانونی طورپر قرض کی ایپس کے ذریعہ فراہمی کے کاروبارمیں ملوث ہیں۔پولیس نے کئی افراد کو گرفتار بھی کیا ہے جو اس کاروبار میں اہم کردار اداکررہے ہیں۔

ان ایپس کے ذریعہ قرض کی ادائیگی کے بعد کمپنی کے اگزیکٹیوز کی جانب سے ہراساں کئے جانے پر بعض افراد نے خودکشی بھی کرلی ہے۔مختصر وقفہ کے بعد دوبارہ ایسے ایپس کی سرگرمیوں میں اضافہ ہوا ہے۔پولیس نے بعض متاثرین کی شکایت کی بنیاد پر ان کے خلاف معاملات درج کئے ہیں۔

ذریعہ
یواین آئی

تبصرہ کریں

Back to top button