مجھے نندی گرام میں سازش کے تحت ہرایا گیا:ممتا بنرجی

چیف منسٹر ممتا بنرجی نے اسمبلی انتخابات کے دوران نندی گرام میں اپنی شکست کا ایک بار پھر ذکر کرتے ہوئے کہا کہ نندی گرام میں شکست دینے کے لئے سازش کی گئی اور جان بوجھ کر میری گاڑی کو حادثہ کا شکار بنایا تاکہ میں انتخابی مہم نہ چلاسکوں۔

کلکتہ: چیف منسٹر ممتا بنرجی نے اسمبلی انتخابات کے دوران نندی گرام میں اپنی شکست کا ایک بار پھر ذکر کرتے ہوئے کہا کہ نندی گرام میں شکست دینے کے لئے سازش کی گئی اور جان بوجھ کر میری گاڑی کو حادثہ کا شکار بنایا تاکہ میں انتخابی مہم نہ چلاسکوں۔

ممتا بنرجی نے آج گورنر کے خطبے پر تحریک شکریہ میں حصہ لیتے ہوئے کہا کہ نندی گرام میں مہم چلانے سے روکنے کے لئے پہلے سازش کی گئی۔اس کے تحت مجھے زخمی کیا گیاتاکہ میں مہم نہ چلا سکوں۔

اس کے بعد بھی مجھے ہرانے کے لئے سازش کی گئی۔تاہم ممتا بنرجی نے یہ واضح نہیں کیا کہ انہیں ہرانے کے لئے سازش کس نے کی۔

انہوں نے میرے خلاف سازش کرنے والوں کو اب عوام سے معافی مانگنی چاہیے! نندی گرام حلقہ میں ممتا اپوزیشن لیڈر شویندو ادھیکاری سے محض 1695ووٹوں سے ہار گئیں۔

ترنمول نے اس نتیجہ کو لے کر عدالت سے رجوع کیا ہے۔ گزشتہ سال اکتوبر میں چیف منسٹر نے اپنے پرانے حلقے بھوانی پور سے ضمنی انتخاب میں ممبراسمبلی بن کر آئینی شرط پوری کرلی ہیں۔ لیکن نندی گرام میں ممتا بنرجی کی شکست اب بھی موضوع ہے۔

خیال رہے کہ بی جے پی ممبران اسمبلی نے آج بھی دو ممبران اسمبلی مہر گوسوامی اور سدیپ مکھرجی کی معطلی کے خلاف احتجاج و ہنگامہ آرائی کی اور اس کے دوران ہی ممتا بنرجی نے اپنی تقریر مکمل کی۔

چیف منسٹر جب اسمبلی میں تقریر کررہیں تھیں اس وقت نندی گرام سے منتخب ہونے والے شوبھندو ادھیکار ی اسمبلی میں موجود تھے مگر انہوں نے کوئی اس وقت کوئی جواب نہیں دیا ہے۔

تاکہ اسمبلی کے باہر انہوں نے کہاکہ ”دراصل، چیف منسٹر نندی گرام میں ہارنے کے درد کو نہیں بھول پارہی ہیں“اس لیے وہ بار بار یہ کہہ رہی ہیں کہ انہیں سازش کے تحت ہرایا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ ممتا بنرجی خود حکومت میں ہیں انہیں اگر سازش نظر آرہی ہے تو وہ تحقیقات کیوں نہیں کرارہی ہیں۔

تبصرہ کریں

Back to top button