محبت ٹھکرانے پر طالبہ کے قتل کے ملزم کو سزائے موت

آندھرا پردیش میں ایک خصوصی عدالت نے جمعہ کے روز ایک نوجوان کو سزائے موت سنائی ہے، محبت کی پیشکش ٹھکرانے پر اُس نے انجینئرنگ کی طالبہ کو ہلاک کردیا تھا۔

امراوتی: آندھرا پردیش میں ایک خصوصی عدالت نے جمعہ کے روز ایک نوجوان کو سزائے موت سنائی ہے، محبت کی پیشکش ٹھکرانے پر اُس نے انجینئرنگ کی طالبہ کو ہلاک کردیا تھا۔ جرم ثابت ہونے پر عدالت نے نوجوان کو سزائے موت سنائی۔

ضلع گنٹور کی ایک عدالت نے فیصلہ سناتے ہوئے 20 سالہ کے سائی کرشنا کو سزائے موت سنائی۔ مجرم نے گذشتہ سال گنٹور شہر میں یوم آزادی کے موقع پر دن دہاڑے انجینئرنگ کی طالبہ کو چاقو گھونپ دیا تھا اس کا یہ جرم، سی سی ٹی وی کیمرے میں قید ہوگیا تھا۔

اس واقعہ پر عوام میں برہمی کی لہر دوڑ گئی تھی۔ حکومت نے اس کیس کی تیز رفتار یکسوئی کیلئے خصوصی عدالت قائم کی تھی۔

لڑکی کے والدین نے عدالتی فیصلہ کا خیرمقدم کیا اور اس طرح کے گھناونے جرام کا ارتکاب کرنے والوں کو سزائے موت دینی چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ ہماری بیٹی کے ساتھ جو کچھ ہوا وہ دیگر بیٹیوں کے ساتھ نہیں ہونا چاہئے۔

تبصرہ کریں

Back to top button