مسابقتی امتحانات کیلئے پراناشہرمیں اسٹیڈی سنٹرقائم کرنے کامطالبہ:اکبراویسی

حیدرآباد۔قائداپوزیشن مجلس اکبرالدین اویسی نے آج ایوان اسمبلی میں تصرف بل پر مباحث کے دوران اقلیتوں کے مسائل پیش کرتے ہوئے کہاکہ حکومت نے اردوکودوسری سرکاری زبان کا درجہ عطا کیا ہے۔

اس پر سرکاری محکمہ جات میں عمل آوری نہیں ہورہی ہے۔ انہوں نے کہاکہ چیف منسٹرنے مسابقتی امتحانات اردوزبان میں منعقد کرنے کا اعلان کیا تھا اس پربھی عمل نہیں کیا جارہا ہے۔

اب جبکہ چیف منسٹرنے 90 ہزار مخلوعہ جائیدادوں پر تقررات کا اعلان کیاہے اقلیتی طلباء کے لئے مسابقتی امتحانات اردوزبان میں منعقد کئے جائیں اورپراناشہرمیں امیدواروں کی کوچنگ کیلئے اسٹیڈی سنٹرقائم کیاجائے۔

انہوں نے اسٹیڈی سنٹر کے قیام کیلئے اویسی اسکولس آف اکسیلنس کے 14 اسکولس میں کسی بھی اسکول میں جگہ فراہم کرنے کا پیشکش کیا۔اکبراویسی نے ٹمریزکے ریسیڈنشیل اسکولس میں غیراقلیتی ٹیچرس کے تقررات کا مسئلہ زیر بحث لایا اورکہاکہ اقلیتی اداروں میں اقلیتی ٹیچرس کاتقرر ہوناچاہئے۔

انہوں نے کہاکہ سرکاری زبان کمیشن میں اقلیتی رکن نہیں ہے۔تلنگانہ اسٹیٹ پبلک سرویس کمیشن اور کونسل فارہائیر ایجوکیشن میں بھی اقلیتی رکن نامزدنہیں کئے گئے۔

Back to top button