منی پور میں زمینی تودے کھسکنے سے کئی افراد زندہ دفن

تودے گرنے سے دریائے ایجیئی کے راستہ میں رکاوٹ پیدا ہوگئی جو تمنگ لانگ اور نونی اضلاع سے ہوکر گزرتی ہے۔ صورتِ حال ابھی بھی پوری طرح واضح نہیں ہے۔ ڈپٹی کمشنر نے عوام بالخصوص بچوں کو دریا کے قریب جانے کے خلاف انتباہ دیا۔

امپھال: منی پور کے ضلع نونی میں گزشتہ چند دن سے جاری موسلادھار بارش کے نتیجہ میں زمینی تودے کھسکنے سے بیسیوں افراد زندہ دفن ہوگئے ہیں۔ مرکزی اور ریاستی ایجنسیوں کی جانب سے آج بھی بچاؤ کارروائی جاری رہی۔ عہدیداروں نے یہ بات بتائی۔

وزیراعظم نریندر مودی اور مرکزی وزیر داخلہ امیت شاہ نے چیف منسٹر منی پور این بیرن سنگھ سے بات چیت کی اور انہیں لوگوں کو بچانے اور صورتِ حال سے نمٹنے میں ہرممکن مدد کا تیقن دیا۔ نونی کے ڈپٹی کمشنر ہولیان لال گیتے نے کہا کہ تپول یارڈ ریلوے کنسٹرکشن کیمپ میں زمینی تودے کھسکنے کا واقعہ پیش آیا۔

تودے گرنے سے دریائے ایجیئی کے راستہ میں رکاوٹ پیدا ہوگئی جو تمنگ لانگ اور نونی اضلاع سے ہوکر گزرتی ہے۔ صورتِ حال ابھی بھی پوری طرح واضح نہیں ہے۔ ڈپٹی کمشنر نے عوام بالخصوص بچوں کو دریا کے قریب جانے کے خلاف انتباہ دیا۔

انہوں نے کہا کہ اگر صورتِ حال مزید ابتر ہوتی ہے تو ضلع نونی کے نشیبی علاقوں میں تباہی آجائے گی۔ ضلع انتظامیہ نے مختلف قومی اور ریاستی ڈیزاسٹر ایجنسیوں کے ساتھ تال میل کرتے ہوئے تلاشی اور بچاؤ و راحت کارروائی انجام دے رہی ہے۔ عوام کو قومی شاہراہ 37 پر سفر نہ کرنے کا مشورہ دیا گیا ہے جہاں تودے گرنے سے کئی مقامات پر رکاوٹیں پیدا ہوگئی ہیں۔

 ضلع انتظامیہ نے متاثرہ افراد کے لئے کئی ہیلپ لائن نمبرس بھی جاری کئے ہیں تاکہ وہ مدد حاصل کرسکیں۔ نارتھ ایسٹ فرنٹیر ریلوے کے چیف پبلک ریلیشنس آفیسر سبیاساچی نے بتایا کہ این ڈی آر ایف‘ ایس ڈی آر ایف‘ ریاستی حکومت اور ریلویز کی بچاؤ ٹیموں کو متاثرہ علاقوں کو روانہ کیا گیا ہے۔

تبصرہ کریں

Back to top button