مودی 30 مارچ کو بمسٹیک چوٹی اجلاس میں شرکت کریںگے

اس چوٹی اجلاس کی تیاریوں کے لیے بمسٹیک کے سینئر عہدیداروں کا اجلاس 28 مارچ کو منعقد ہوگا ، جس کے دوسرے دن بمسٹیک کے وزرائے خارجہ کے اجلاس منعقد ہوںگے ۔ ان اجلاسوں میں کووِڈ سے متعلق چیالنجس ، بمسٹیک کے تمام ارکان کو بین الاقوامی نظام میں موجود چیالنجس اور غیریقینی صورتِ حال پر غور و خوض کیا جائے گا اور بمسٹیک کے تکنیکی و معاشی تعاون کو اگلی سطح تک لے جانے کے نشانے کی تکمیل پر زور دیا جائے گا ۔

نئی دہلی ۔ جنوبی ایشیاء میں دوست پڑوسی ممالک کے ساتھ معاشی ، تجارتی اور سیکوریٹی تعاون کو مضبوط کرنے وزیر اعظم نریندر مودی 30 مارچ کو ہمہ شعبہ جاتی تکنیکی و معاشی تعاون پہل (بمسٹیک) چوٹی اجلاس میں شرکت کریںگے۔ یہ اس گروپ کا پانچواں چوٹی اجلاس ہوگا ۔

بمسٹیک ایک علاقائی تنظیم ہے ، جو 6 جون 1997ء کو قائم کی گئی تھی ۔ بنکاک اعلامیہ پر دستخط کے بعد اس تنظیم کا قیام عمل میں آیا تھا ۔ علاقائی چوٹی اجلاس جو ورچول موڈ میں منعقد کیا جارہا ہے ، اس کی میزبانی سری لنکا کرے گا ، جو بمسٹیک کا موجودہ صدر نشین ہے ۔

اس چوٹی اجلاس کی تیاریوں کے لیے بمسٹیک کے سینئر عہدیداروں کا اجلاس 28 مارچ کو منعقد ہوگا ، جس کے دوسرے دن بمسٹیک کے وزرائے خارجہ کے اجلاس منعقد ہوںگے ۔ ان اجلاسوں میں کووِڈ سے متعلق چیالنجس ، بمسٹیک کے تمام ارکان کو بین الاقوامی نظام میں موجود چیالنجس اور غیریقینی صورتِ حال پر غور و خوض کیا جائے گا اور بمسٹیک کے تکنیکی و معاشی تعاون کو اگلی سطح تک لے جانے کے نشانے کی تکمیل پر زور دیا جائے گا ۔

توقع ہے کہ یہ قائدین اس گروپ کے بنیادی ادارہ جاتی ڈھانچوں اور میکانزمس پر بھی تبادلۂ خیال کریںگے ۔ بمسٹیک کے موجودہ ارکان میں بنگلہ دیش ، بھوٹان ، ہندوستان ، میانمار ، نیپال ، سری لنکا اور تھائی لینڈ شامل ہیں ۔ شعبہ جاتی گروپ ہونے کے سبب بمسٹیک نے ابتداء میں 1997ء میں 6 شعبوں میں تعاون کو فروغ دینے پر توجہ مرکوز کی تھی ۔ ان میں تجارت ، ٹکنالوجی ، توانائی ، ٹرانسپورٹ ، سیاحت اور سمکیات شامل ہیں ۔

ذریعہ
آئی اے این ایس

تبصرہ کریں

یہ بھی دیکھیں
بند کریں
Back to top button