مہاراشٹرا اور ممبئی میں ہائی الرٹ، امتناعی احکام نافذ

ممبئی کے نہرو نگر علاقہ میں شیوسینا کے باغی رکن اسمبلی منگیش کڈالکر کے کیدار ناتھ مندر کےقریب واقع بورڈ کو توڑنے اور توڑ پھوڑ کے معاملے میں شاکھا پرمکھ دلیپ مورے اکیس شیوسینکوں کو سی آر پی سی 68کے تحت زیر حراست لیا ہے۔

ممبئی : ممبئی میں شیوسینا کے تشدد کے بعدحالات پر قابو پانے کے لئے اب مہاراشٹر اور ممبئی میں ہائی الرٹ ہے اور ممبئی میں 144 حکم امتناعی نافذ کر دیا گیا ہے اس کے علاوہ باغی اراکین کے گھروں اور دفتر پر حملہ کرنے والوں کے خلاف بھی پولس نے کارروائی شروع کر دی ہے۔

ممبئی کے نہرو نگر علاقہ میں شیوسینا کے باغی رکن اسمبلی منگیش کڈالکر کے کیدار ناتھ مندر کےقریب واقع بورڈ کو توڑنے اور توڑ پھوڑ کے معاملے میں شاکھا پرمکھ دلیپ مورے اکیس شیوسینکوں کو سی آر پی سی 68کے تحت زیر حراست لیا ہے۔

ان شیوسینکوں پر توڑ پھوڑ اور تشدد برپا کرنےکی پاداش میں کارروائی کی گئی ڈی سی پی ترجمان سنجے لاڈکر نے بتایا کہ شہر میں سیاسی حالات کےپیش نظر 144 کا اطلاق کیا گیا ہے۔ ممبئی میں جگہ جگہ پولس بندوبست کی تعیناتی کی گئی ہے ۔

اس کے ساتھ ہی حالات پر نطر رکھی جارہی ہے جلسے جلوس اور سیاسی احتجاج پر پابندی عائد کر دیا گیا ہے اس کے علاوہ آتش بازی اور دیگر تقریبات پر بھی پابندی عائد کی گئی ہے حالات پر نظر رکھا جارہا ہے پولیس نے حالات کو قابو میں کرنے کا دعوی کیا ہے شیوسینا بھون میں ادھوٹھاکرے کی موجودگی میں میٹنگوں کا دور شروع ہو گیا ہےحالات اور سیاسی منظر نامہ کا جائزہ لیا جارہا ہے۔

ممبئی پولس سوشل میڈیا پر بھی نظر رکھ رہی ہےقابل اعتراض مواد اور مشمولات کو حذف کیا جارہا ہے ۔ ممبئی شہر کے نظم ونسق کی برقراری پر بھی نظر رکھی جارہی ہے۔پولس نے اپنےطور پر حالات پر نظر رکھنا شروع کر دی ہے۔سیاسی صورتحال کے پیش نظر ممبئی اور مہاراشٹر حالات انتہائی کشیدہ لیکن امن برقرار ہے۔

مہاراشٹر میں نظم و نسق کی برقرار ی کے لئے شہر میں حکم امتناعی اورریاست کے تمام اضلاع میں پابندیاں اور حکم امتناعی کا نفاذعمل میں لایا گیا ہے ۔ ممبئی میں تشدد برپا کرنے والے شیوسینکوں پر کارروائی بھی تیز کردی گئی ہے ۔

تبصرہ کریں

Back to top button