میرے کانگریسی ساتھیو‘ کرپٹ مودی حکومت کے خلاف لڑتے رہو: راہول گاندھی

راہول گاندھی نے کہاکہ میرے کانگریسی ساتھیوں بدعنوان مرکزی حکومت کے خلاف لڑتے رہو‘ رکو مت‘ تھکو مت‘ گھبراؤ مت۔ میڈیا پارٹی کی تحقیقات کے بموجب ڈسو ایویئشن نے دلال کو ماریشس میں 2007 اور 2012 کے درمیان رشوت دی تھی۔

نئی دہلی: کانگریس قائد راہول گاندھی نے منگل کے دن اپنے پارٹی ساتھیوں سے کہا کہ وہ کرپٹ مرکزی حکومت کے خلاف لڑائی سے نہ تو رکیں اور نہ گھبرائیں کیونکہ ہر قدم پر سچائی ان کے ساتھ ہے۔ انہوں نے یہ ریمارکس فرنچ انوسٹیگیٹیو جرنل میڈیا پارٹ کے تازہ دعوؤں کے ایک دن بعد کئے۔

 میڈیا پارٹ نے دعویٰ کیا تھا کہ جعلی بلوں کے ذریعہ فرنچ طیارہ ساز کمپنی ڈسو ایویئشن نے ایک دلال کو کم ازکم 7.5 ملین یوروز کی رشوت دی تاکہ یہ دلال انہیں ہندوستان سے رافیل طیاروں کا کنٹراکٹ دلاسکے۔ وزارت دفاع یا ڈسو ایویئشن کی طرف سے ابھی تک کوئی ردعمل سامنے نہیں آیا ہے۔ راہول گاندھی نے رافیل اسکام کا ہیش ٹیاگ استعمال کرتے ہوئے ہندی میں ٹویٹ کیا کہ جب ہر قدم پر سچائی آپ کے ساتھ ہو تو پھر پریشانی کی کیا بات ہے؟

میرے کانگریسی ساتھیوں بدعنوان مرکزی حکومت کے خلاف لڑتے رہو‘ رکو مت‘ تھکو مت‘ گھبراؤ مت۔ میڈیا پارٹی کی تحقیقات کے بموجب ڈسو ایویئشن نے دلال کو ماریشس میں 2007  اور 2012 کے درمیان رشوت دی تھی۔ این ڈی اے حکومت نے 23  ستمبر 2016 کو 36  رافیل لڑاکا طیارے خریدنے کی معاملت کو قطعیت دی تھی۔

 اس سے لگ بھگ 7 سال قبل یوپی اے دورِ حکومت میں  126  ایم ایم آر سی اے طیارے ہندوستانی فضائیہ کے لئے خریدنے کی معاملت پایہ تکمیل کو نہیں پہنچ سکی تھی۔ کانگریس نے مودی حکومت پر معاملت میں بڑی بے قاعدگیوں کا الزام عائد کیا تھا۔ اس نے کہا تھا کہ مودی حکومت نے فی طیارہ 1670کروڑ روپے قیمت چکائی جبکہ یوپی اے دورِ حکومت میں 526کروڑ روپے فی طیارہ قیمت طئے پائی تھی۔

ذریعہ
پی ٹی آئی

تبصرہ کریں

Back to top button