ناخن: پرکشش کیسے بنائیں؟

ماہرین کے مطابق ناخن کے رنگ اور ساخت ہماری صحت کے بارے میں آگا ہ کرتے ہیں جن کو سامنے رکھ کر ہم اپنی بیماریوں کاعلاج کرسکتے ہیں ۔

ناخنوں پر رنگ کا زیادہ استعمال ان کیلئے نقصاندہ ہوتا ہے جبکہ ان کی کٹائی کو معمول بنانا اورصاف رکھنا بھی ضروری ہوتا ہے، مگر ایک اہم بات یہ ہے کہ ناخنوں کے ذریعے مجموعی صحت کی عکاسی بھی ممکن ہوتی ہے۔انسانی جسم کے مختلف حصوںکی ساخت اوران کے رنگوں کا انسانی سوچ، فکر اور صحت سے گہرا تعلق ہوتا ہے، اسی لیے ایک تحقیق میں ماہرین صحت کا کہنا ہے کہ ناخن کے مختلف رنگ اور ساخت انسان کی صحت کے متعلق حیرت انگیز معلومات فراہم کرتے ہیں۔

ماہرین کے مطابق ناخن کے رنگ اور ساخت ہماری صحت کے بارے میں آگا ہ کرتے ہیں جن کو سامنے رکھ کر ہم اپنی بیماریوں کاعلاج کرسکتے ہیں ۔ ناخن دیکھنے میں ایک عام سی شے لگتے ہیں لیکن حقیقت میں یہ ہماری صحت کے بارے میں درست معلوم دیتے ہیں۔ بعض اوقات شدید بیماری یا ذہنی تنائو کی وجہ سے ہمارے ناخنوں کے کنارے ناہموار ہوجاتے ہیں۔

یہ کوئی خاص خطرے کی علامت نہیں لیکن آپ کو چاہیے کہ اپنی صحت پر توجہ دیں۔ کچھ لوگوں کو فنگس کی انفیکشن کی وجہ سے ناخنوں کی خرابی کی شکایت ہوجاتی ہے اوران کے ناخن بہت زیادہ خراب ہوجاتے ہیں۔ ان لوگوں کو زیادہ پریشان ہونے کی ضرورت نہیں اور ماہر جلد سے مشورے کے بعد ادویات کا استعمال کرنا چاہیے۔

اگر ناخنوں میں سفید نشانات ظاہر ہونے لگیں تو یہ جسم میں وٹامن ڈی کی کمی کی نشانی ہے۔ آپ کو چاہیے کہ اپنی غذا میںدودھ کا اضافہ کردیں اورساتھ ہی بازار میںدستیاب وٹامن ڈی کی ادویات کا استعمال شروع کردیں اورساتھ ہی ڈاکٹر سے مشورہ کریں ۔

اگر آپ ناخن اور انگلیاں چبانے کی عادت میںمبتلا ہیںتو بعض اوقات ہاتھوں کی انگلیوں میںچھوٹے چھوٹے نشانات بن جاتے ہیں… ان کی وجہ سے جسم میں انفیکشن کے داخل ہونے کے امکانات بڑھ جاتے ہیں اور جسم کے دیگر حصوں پر بھی نشانات بن سکتے ہیں، ہر لڑکی یہ چاہتی ہے کہ اس کے ہاتھ اور ناخن صاف، خوبصورت اور چمکدار نظرآئیں، دوسرے یہ کہ ناخن مضبوط ہوں اور جلدی بڑھتے ہوں، لیکن زندگی اتنی مصروف ہوگئی ہے کہ کسی کے پاس اتنا وقت نہیں کہ وہ مستقل ڈاکٹروں یا بیوٹیشنز کے چکر لگا سکے یا ان سے معلومات حاصل کرسکے۔ ایسے میں کچھ گھریلو ٹوٹکے ایسے ہیں جن پر عمل کرکے آپ گھر بیٹھے اپنے ہاتھوں اور ناخنوں کو خوبصورت بناسکتی ہیںـ:

٭ پانی، ناخنوں کو صاف اور چمکدار رکھنے کا سب سے سادہ اورآسان حل ہے۔ اسی لیے جتنا ہوسکے پانی کا استعمال زیادہ سے زیادہ کریں۔ زیادہ سے زیادہ پانی پیجئے۔ اس سے آپ کو واضح فرق نظرآئے گا۔

٭ ایک اچھا عمل یہ ہے کہ تھوڑا سالیموں کا رس لیں، اس میں اپنے ناخن کچھ دیر ڈبو کر رکھیں۔ اس کے بعد نیم گرم پانی سے ہاتھ دھولیں اوراس پر کوئی اچھا موئسچرائزر لگائیں، آپ چاہیں تو ہاتھوں اورناخنوں پر لیموں مل بھی سکتی ہیں اوراس کے بعد گرم پانی سے ہاتھ دھولیں۔

٭ اپنے ناخن 7 سے10 منٹ کیلئے نیم گرم سرسوں کے تیل میںڈبو لیں اوران کو آہستگی سے تیل کے اندر ہی ملتے رہیں، اس سے آپ کے ناخن مضبوط ، صحت مند اورفٹ رہیںگے۔

٭ زیتون کا تیل بھی آپ کے ناخنوں کیلئے بہتر ین ہے، ایک دن کے وقفے کے ساتھ15 منٹ کیلئے اپنے ناخن زیتون کے تیل میں ڈبوئیں، ہفتے میں تین سے چار دفعہ یہ عمل دہرائیں۔

٭ ناخنوں کی حفاظت کیلئے آپ کو ان کے ٹوٹنے اور چھلنے کا خیال رکھنا چاہیے ۔ کیوٹیکلز ناخنوں کے گرد موجود ہوتے ہیں، یہ ناخنوں کی صحت کا سبب ہوتے ہیں۔ اگر ان کا خیال نہ رکھا جائے تو یہ خشک اور بدنما ہوجاتے ہیں۔

٭ موئسچرائزنگ کریم سے دن میں دو مرتبہ اپنے ناخنوں کو موئسچرائزر کریں۔اس سے آپ کے ناخن زیادہ محفوظ اورصحت مند رہیںگے۔

٭ ناخن کاٹتے وقت یہ خیال رکھیں کہ کیوٹیکل نہ کٹ جائے، کیونکہ یہ جراثیم سے حفاظت کا سبب ہے۔ ہمیشہ نہانے کے بعد کیوٹیکلز کو ناخن کے پیچھے سے آگے کی طرف دبائیں۔

٭٭٭

ذریعہ
منصف نیوز بیورو

تبصرہ کریں

Back to top button