نسل پرست سفیدفام نوجوان کی امریکہ کی سوپر مارکٹ میں فائرنگ،10 افراد ہلاک

بندوق بردار نے بعدازاں اس گارڈ کو ہلاک کردیا اورپھر اسٹور کے اندر دوسروں کونشانہ بنایا۔ بعدازاں پولیس اسٹور میں داخل ہوئی اور اس نے بندوق بردار سے نمٹا۔ ایک مرحلہ پر بندوق بردار نے اپنی گردن پر بندوق تان لی تھی۔

بفیلو: ایک سفید فام 18 سالہ لڑکے نے جس نے فوجی وردی پہن رکھی تھی اور ہیلمٹ کیمرہ سے لائیو اسٹریمنگ کررہاتھا بفیلوکی ایک سوپر مارکٹ میں رائفل سے فائرنگ کردی۔ ہفتہ کے دن 10افراد ہلاک اور دیگر3 زخمی ہوگئے۔ حکام نے اسے نسل پرستانہ پرتشدد انتہاپسندی قراردیا ہے۔ اس نے ٹاپس فرینڈلی مارکٹ میں زیادہ تر سیاہ فام خریداروں اور ورکرس کو نشانہ بنایا۔

کم ازکم 2منٹ تک وہ شوٹنگ کا لائیوبراڈکاسٹ اسٹریمنگ پلیٹ فارم ٹوئرچ پر کرتا رہا۔ بعدازاں ٹوئرچ نے اس کا ٹرانسمیشن روک دیا۔ پولیس نے بتایاکہ حملہ آور نے 11 سیاہ فاموں اور دوسفید فاموں کو نشانہ بنایا۔ بعدازاں اس نے خودکو پولیس کے حوالے کردیا۔ اسے پیپرمیڈیکل گاؤن میں جج کے سامنے پیش کیاگیا۔

 مقام حملہ کے قریب میڈیا سے بات چیت میں گورنر نے کہا کہ میرے خیال میں اس سفید فام نے جو سفیدفام نسل کو دوسروں سے افضل سمجھتا ہے ایک بے قصور کمیونٹی کے خلاف ہیٹ کرائم کا ارتکاب کیا ہے۔ اسے اپنے مابقی دن سلاخوں کے پیچھے کاٹنے ہوں گے۔

مشتبہ بندوق بردار کا نام پیٹن جنڈرون بتایاگیا ہے، وہ کونکلنگ‘نیویارک کا رہنے والا ہے جو بفیلو سے جانب جنوب مشرق تقریباً200 میل(320کیلومیٹر) کے فاصلہ پر واقع ہے۔ یہ فوری واضح نہ ہوسکا کہ حملہ آور حملہ کیلئے بفیلوکیوں آیا۔ اس کی ٹوئرچ فیڈ سے لئے گئے کلپ میں جو سوشیل میڈیا پر پوسٹ ہوا اسے اپنی کارسے سوپرمارکٹ پہنچتے دکھایاگیا ہے۔

بندوق بردار نے اسٹور کے باہر 4افراد پرگولی چلائی جن میں تین ہلاک ہوگئے۔ بفیلو کے پولیس کمشنر جوزف نے یہ بات بتائی۔ اسٹور کے اندر ایک سیکیوریٹی گارڈ  نے جو بفیلو کے ریٹائرڈ پولیس عہدیدار ہے کئی گولیاں چلائیں‘ لیکن ان کا کوئی اثر نہیں ہوا کیونکہ بندوق بردار نے بلٹ پروف جیاکٹ پہن رکھی تھی۔

بندوق بردار نے بعدازاں اس گارڈ کو ہلاک کردیا اورپھر اسٹور کے اندر دوسروں کونشانہ بنایا۔ بعدازاں پولیس اسٹور میں داخل ہوئی اور اس نے بندوق بردار سے نمٹا۔ ایک مرحلہ پر بندوق بردار نے اپنی گردن پر بندوق تان لی تھی۔

 پولیس کے دو عہدیداروں نے اسے ہتھیارپھینک دینے کو کہا۔ ٹاپس فرینڈلی مارکٹ نے بیان جاری کرکے تشدد کی اس بے تکی حرکت پر دکھ کا اظہارکیا اور مرنے والوں کے کنبوں سے اظہارتعزیت کیا۔ مارچ 2021ء میں بولڈر‘کولوراڈو کے کنگ سوپرس گروسری اسٹور میں حملہ ہوا تھا اور 10ہلاکتیں ہوئی تھیں۔

تبصرہ کریں

Back to top button