وشو اہندو پریشد کا اب مزاروں کے خلاف احتجاج

قومی دارالحکومت سے متصل نوئیڈا میں وشو اہندو پریشد (وی ایچ پی)نے اب مزاروں کے خلاف مورچہ کھول دیا ہے اور انتظامیہ کو انتباہی لہجہ میں پیغام دیا ہے کہ شہر میں جگہ جگہ مبینہ غیر قانونی مزاروں کو اگر نہیں ہٹایا گیا تو بڑی تحریک چھیڑی جائے گی۔

نوئیڈا: قومی دارالحکومت سے متصل نوئیڈا میں وشو اہندو پریشد (وی ایچ پی)نے اب مزاروں کے خلاف مورچہ کھول دیا ہے اور انتظامیہ کو انتباہی لہجہ میں پیغام دیا ہے کہ شہر میں جگہ جگہ مبینہ غیر قانونی مزاروں کو اگر نہیں ہٹایا گیا تو بڑی تحریک چھیڑی جائے گی۔

وہپ کے میرٹھ خطہ کے سکریٹری ڈاکٹر راج کمل گپتا نے نوئیڈا انتظامیہ سے کہا کہ نوئیڈا میں بہت تیزی سے جگہ جگہ مبینہ غیر قانون مزاروں کی تعمیر ہورہی ہے۔اگر ان غیر قانونی ڈھانچوں کو بلا تاخیر نہیں ہٹایا گیا تو ہم ریاست گیر تحریک شروع کرنے پر مجبور ہوں گے۔

گپتا نے الزام لگایا کہ انہیں مزاروں کے ضمن میں نوئیڈا اتھاریٹی اینڈ نوئیڈا کے ڈی ای کو میمورنڈم دے کر لوٹے ہوئے وہپ افسران پر سیکٹر39کے تھانے کے نزدیک سادہ لباس میں کچھ لوگوں نے وہپ بجرنگ دل کارکنوں پر جان لیوا حملہ کرنے کی کوشش کی۔

جنہیں بعد میں پولیس نے اپنے ملازم بتایا‘ پھر بھی وی ایچ پی کے کارکنوں کو جھوٹے کیس میں پھنسانے کی کوشش کی گئی جو کہ انتہائی قابل مذمت اور نوئیڈا پولیس انتظامیہ کی شبیہ کو داغدار کرنے والا ہے۔

وی ایچ پی لیڈر نے کہا کہ ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ پولیس تھانے کے سامنے کھلے عام سینہ پر ریوالور رکھ کر جان سے مارنے کی دھمکی دینے والے پولیس اہلکار کو فوری طور پر گرفتار کیا جائے اور کارکنوں پر جھوٹے مقدمات درج کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے۔ نیز تمام مقدمات واپس لیے جائیں۔

تبصرہ کریں

Back to top button