ٹاملناڈو کے بس ڈرائیور نے موت سے پہلے 30 زندگیاں بچائیں

ایک بس ڈرائیور نے مدورائی میں دل کا دورہ پڑنے سے موت سے پہلے 30جانیں بچائیں۔ 44 سالہ ارو مگم اراپالیم سے کوڈائی کنال تک ٹی این یس ٹی سی کی ایک بس ڈرائیوکررہا تھا جس میں 30 مسافر سوارتھے۔

چینائی: ٹاملناڈو اسٹیٹ روڈ ٹرانسپورٹ کارپوریشن (ٹی این ایس ٹی سی) کے ایک بس ڈرائیور نے مدورائی میں دل کا دورہ پڑنے سے موت سے پہلے 30جانیں بچائیں۔ 44 سالہ ارو مگم اراپالیم سے کوڈائی کنال تک ٹی این یس ٹی سی کی ایک بس ڈرائیوکررہا تھا جس میں  30 مسافر سوارتھے۔

صبح6 بج کر 20 منٹ پر یہ بس جیسے ہی اراپالیم سے روانہ ہوئی ڈرائیور نے کنڈکٹربھاگیہ راج کو بتایاکہ اس کے سینہ میں شدید درد ہورہا ہے۔ ڈھیر ہونے سے پہلے اس نے کسی طرح بس کو سڑک کے کنارے روک دیا۔

کنڈکٹر نے فوری ایمبولنس کو کال کیا لیکن ایمبولنس کے پہنچنے تک ارو مگم فوت ہوچکا تھا۔

 ٹی این ایس ٹی سی کے ڈپٹی کمرشیل مینجر (مدورائی) یوراج نے آئی اے این ایس کو بتایاکہ ارومگم 12 سال سے ٹی این ایس ٹی سی میں ڈرائیور کی حیثیت سے کام کررہا تھا اور اس نے اپنی موت سے پہلے بس کو سڑک کے کنارے پارک کرنے کا جو بے مثال کام کیا ہے اسے ہمیشہ یاد رکھاجائے گا۔

پسماندگان میں دو لڑکیاں ہیں۔ اس کی نعش پوسٹ مارٹم کے لئے سرکاری راجہ جی ہاسپٹل کو منتقل کردی گئی۔ کریمیڈو پولیس نے کیس درج کرلیا اورتحقیقات جاری ہیں۔

ذریعہ
آئی اے این ایس

تبصرہ کریں

Back to top button