ٹسٹ کرکٹ میں واپسی کے بارے میں بات کرنا جلدبازی ہوگی: محمد عامر

عامر نے کہاکہ میں تین سال بعد کھیل رہا ہوں اس لیے ایک تیزگیندباز کے طورپریہ آسان نہیں ہے۔ میں نے پچھلے چار برسوں میں کوئی فرسٹ کلاس کرکٹ نہیں کھیلاہے لیکن میں پہلے گیم کے بعد بہتر ہو رہا ہوں۔

لندن: محمد عامر ایک بار پھر فرسٹ کلاس کرکٹ کھیل رہے ہیں۔ اپنے ٹسٹ کیریئر کے خاتمے کا اعلان کرنے کے ڈھائی سال بعد، بائیں ہاتھ کے تیز گیند باز سفید رنگ کے کپڑوں اور سرخ گیند کے ساتھ دوبارہ میدان پرواپس آگئے ہیں۔ عامر نے نسیم شاہ کی جگہ انگلینڈ کے گلوسٹر شائر کاؤنٹی کرکٹ کلب سے معاہدہ کیا اور جمعرات کو اس سیزن کا اپنا پہلا وکٹ لیا۔

عامر ابھی صرف 30 سال کے ہیں۔ حالیہ وقت میں عامر کے کیریئر کے بارے میں دنیا بھر میں یہ سوال تقریباً ناگزیر ہو گیا ہے کہ کیا وہ ریٹائرمنٹ سے باہر آنے پر غور کریں گے؟۔ انہوں نے ساؤتھمپٹن ​​میں کہا کہ ٹسٹ میں واپسی کے بارے میں بات کرنا جلدبازی ہوگی۔ آگے کیاہوگا یہ آپ کبھی نہیں بتاسکتے۔ چیزیں بدلی جاسکتی ہیں لیکن فی الحال کے لئے میں گلوسٹر شائر کے لیے کھیل کر لطف اندوز ہو رہا ہوں۔

عامر نے گزشتہ ہفتے سرے کے خلاف اپنی نئی کاؤنٹی ٹیم کے لیے ڈیبیوکرتے ہوئے 28 اوورز کئے اور اس ہفتے ہیمپشائر کے خلاف پہلے دن کے کھیل میں 21 اوورز کیے ۔ اس مقابلے میں انہوں نے اب تک تین وکٹیں حاصل کی ہیں اور وہ تمام وکٹیں پرانی گیند سے آئی ہیں۔

عامر نے کہاکہ میں تین سال بعد کھیل رہا ہوں اس لیے ایک تیزگیندباز کے طورپریہ آسان نہیں ہے۔ میں نے پچھلے چار برسوں میں کوئی فرسٹ کلاس کرکٹ نہیں کھیلاہے لیکن میں پہلے گیم کے بعد بہتر ہو رہا ہوں اور لڑکوں کی مدد کرنے اور ان کے لیے اچھا کرنے کی کوشش کر رہا ہوں۔ بحیثیت باؤلر، یہ میرا فرض ہے کہ میں اچھی باؤلنگ کروں اور آگے سے قیادت کروں۔

تبصرہ کریں

Back to top button