پارلیمنٹ کے ہنگامی بجٹ اجلاس کی تیاریاں مکمل

وزیر فینانس نرملاسیتارمن پیر کے دن معاشی سروے 2021-22 اور منگل کو مرکزی بجٹ پیش کریں گی۔ کورونا وباء کی تیسری لہر کے مدنظرلوک سبھا اور راجیہ سبھا کی علٰحدہ بیٹھک شفٹ سسٹم سے ہوں گی۔

نئی دہلی: پارلیمنٹ کے ہنگامی بجٹ اجلاس کی تیاریاں مکمل ہیں جو پیر کے دن سے شروع ہوگا۔ اپوزیشن، پیگاسس جاسوسی‘ کسانوں کی بدحالی اور مشرقی لداخ میں چین کی دراندازی جیسے مسائل پر حکومت کو نشانہ بنانے تیار ہے۔ اجلاس کا آغاز صدرجمہوریہ کے خطبہ سے ہوگا۔ کووڈ19 کی صورتحال کے مدنظر لوک سبھا اور راجیہ سبھا، سنٹرل ہال اور دونوں ایوانوں کے چیمبرس میں یکجا منعقد ہوگا۔

 وزیر فینانس نرملاسیتارمن پیر کے دن معاشی سروے 2021-22 اور منگل کو مرکزی بجٹ پیش کریں گی۔ کورونا وباء کی تیسری لہر کے مدنظرلوک سبھا اور راجیہ سبھا کی علٰحدہ بیٹھک شفٹ سسٹم سے ہوں گی۔ بجٹ اجلاس کا پہلا حصہ 31جنوری تا11 فروری اور دوسرا حصہ 14مارچ تا8اپریل منعقد ہوگا۔ بجٹ اجلاس ایسے وقت منعقد ہورہا ہے جب 5 ریاستوں اترپردیش، اتراکھنڈ، پنجاب، گوا اور منی پور میں 7مرحلہ میں 10 فروری تا7 مارچ اسمبلی الیکشن ہونے والا ہے۔

 اصل اپوزیشن اعلان کرچکی ہے کہ وہ کسانوں کی بدحالی، چینی دراندازی، متاثرین کووڈ کو راحت پیاکیج، ایرانڈیا کی فروخت اور پیگاسس جاسوسی جیسے مسائل پر ہمخیال سیاسی جماعتوں کو ساتھ لے کر حکومت کو گھیرے گی۔

ذریعہ
پی ٹی آئی

تبصرہ کریں

Back to top button