پردیش کانگریس میں اجتماعی فیصلوں کا فقدان:جگاریڈی

حیدرآباد: متنازعہ بیانات دینے کیلئے مشہور سنگاریڈی کے رکن اسمبلی ٹی جگا ریڈی نے کہا کہ تلنگانہ پردیش کانگریس میں اجتماعی فیصلوں کا فقدان ہے۔ ریونت ریڈی اور مانیکیم ٹیگور یکطرفہ فیصلہ کررہے ہیں۔

یہاں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ریونت ریڈی کے ہر فیصلہ کو مانیکیم ٹیگور کی تائید حاصل ہے اور اپنے ان فیصلوں کی ناکامی کیلئے سینئر قائدین کو موردالزام ٹھہرایا جاتا ہے۔

جگا ریڈی نے کہا کہ ان کے خلاف پارٹی ہائی کمان کو غلط رپورٹ روانہ کی گئی کہ وہ پارٹی تبدیل کرنے والے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس طرح کی افواہ اڑانے والوں کوتھوڑی عقل تو ہونی چاہئے۔

انہوں نے کہا کہ وہ وی ہنمنت راؤ کی دعوت پر سینئر قائدین کے اجلاس میں شرکت کیلئے حاضر ہوئے ہیں۔ وہ کسی کے رحم وکرم پر سیاست میں نہیں ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ان کے اور تمام کانگریس پارٹی کیلئے سونیا گاندھی اور راہول گاندھی ہی باس ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اگر پارٹی کی جانب سے انہیں وجہ بتاؤ نوٹس جاری کی جاتی ہے تو وہ اُس کا جواب دینے کیلئے تیار ہیں۔

کانگریس قائد نے کہا کہ انہیں پارٹی سے معطل کرنے کی ہمت کسی میں نہیں ہے۔

اگر انہیں پارٹی سے معطل کردیا بھی گیا تو وہ ہمیشہ سونیا اور راہول کے وفادار ہی رہیں گے اور اگرریونت ریڈی چیالنج کرتے ہیں تو وہ رکنیت اسمبلی سے بھی مستعفی ہونے کیلئے تیار ہیں،

جگاریڈی نے انتباہ دیا کہ اگر انہیں پارٹی سے معطل کیا جاتا ہے تو وہ روزانہ نئے اسکام کا انکشاف کریں گے۔

Back to top button