پوٹین سے بات چیت کیلئے بائیڈن کی مشروط پیشکش

یوکرین تنازعہ کے حل کے لیے امریکہ اور روس کے صدور کا کانفرنس پر اصولی اتفاق ہوا ہے۔رپورٹس کے مطابق روس اور امریکہ کے درمیان کانفرنس سے متعلق تیاریاں جمعرات کو شروع ہوں گی۔

واشنگٹن۔ صدر امریکہ جوبائیڈن نے روسی صدر ولادیمیرپوٹین سے ملاقات کے لیے اصولی طور پر اتفاق کرلیاہے تاہم انہوں نے شرط رکھی ہے کہ اس کے لیے روس یوکرین پر حملہ نہ کرے۔ وائٹ ہاوز ذرائع نے صدر فرانس ایمانیوئل میکرون زیر سرپرستی آخری سفارتی مذاکرات کے بارے میں یہ بات بتائی۔

مذاکرات کامقصد کئی دہوں میں یورپ میں پہلی مرتبہ بدترین سیکیورٹی بحران میں کمی کرناہے۔ امریکہ نے کئی مرتبہ یوکرین پر روسی حملوں کے خلاف انتباہ دیاہے اور بتایاہے ماسکو اگر اپنے منصوبوں میں پیشرفت کرے تو اس کے خلاف سخت تحدیدات عائد کردی جائیں گی۔ تاہم روس نے یوکرین پر حملہ کے منصوبہ کی تردید کردی۔

وائٹ ہاوز کی پریس سکریٹری جین ساکی نے اپنے بیان میں بتایا کہ صدر نے کئی مرتبہ واضح کردیا کہ اسی لحاظ سے ہم حملہ کی شروعات تک سفارتکار جاری رکھنے کے اہل پابند ہیں۔

 انہوں نے بتایا کہ امریکی وزیر خارجہ انٹونی بلنکن روسی وزیر خارجہ سرجئی لاروف اس ہفتہ کے اواخر یورپ میں ملاقات کریں تاہم شرط یہ ہے کہ روس اپنی فوجی کاروائی میں پیشرفت نہ کریں۔ انہوں نے بتایا کہ صدر جوبائیڈن نے اصولی طور پر بات چیت کے بعد پوٹین سے ملاقات کے لیے اصولی طور پر اتفاق کرلیا تاہم یہ اس صورت میں ہوگا جبکہ روس‘یوکرین پر حملہ نہ کریں۔ ہم سفارتکاری کے لیے ہمیشہ تیار رہتے ہیں۔ جین ساکی نے بتایا کہ بائیڈن نے اتوار کو میکرون سے بات چیت کی اور دونوں قائدین نے موجودہ سفارتکاری اور یوکرین کی سرحد پر روسی فوج کی تعداد میں اضافہ کا جواب دینے مزاحمتی کوششوں پر تبادلہ خیال کیا۔

یواین آئی کے بموجب  یوکرین تنازعہ کے حل کے لیے امریکہ اور روس کے صدور کا کانفرنس پر اصولی اتفاق ہوا ہے۔رپورٹس کے مطابق روس اور امریکہ کے درمیان کانفرنس سے متعلق تیاریاں جمعرات کو شروع ہوں گی۔

ذریعہ
پی ٹی آئی،یواین آئی

تبصرہ کریں

Back to top button