چیف منسٹر پنجاب نے بس چلائی، محکمہ ٹرانسپورٹ میں 58 نئی بسوں کا اضافہ

چیف منسٹر پنجاب نے 58 نئی بسوں کو بیڑے میں شامل کیا۔ پنجاب میں پہلی مرتبہ 400 کروڑ روپئے کی لاگت سے ریاستی بیڑے میں 842 جدید گاڑیوں کا اضافہ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ چنی جھنڈی دکھانے کے بعد خود بس چلائی اور نئی گاڑیوں کے قافلہ کی قیادت کی۔

چندی گڑھ۔: چیف منسٹر پنجاب چرنجیت سنگھ چنّی نے آج 58 نئی بسوں کو بیڑے میں شامل کیا۔ پنجاب میں پہلی مرتبہ 400 کروڑ روپئے کی لاگت سے ریاستی بیڑے میں 842 جدید گاڑیوں کا اضافہ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ چنی نے یہاں اپنی سرکاری قیامگاہ پر جھنڈی دکھانے کے بعد خود بس چلائی اور نئی گاڑیوں کے قافلہ کی قیادت کی۔

 پنجاب روڈ ویز ٹرانسپورٹ کارپوریشن میں پہلی قسط میں 30 بسوں اور پنجاب اسٹیٹ بس اسٹینڈ مینجمنٹ کمیٹی میں 28 بسوں کا اضافہ کیا جارہا ہے۔ چیف منسٹر نے ریاست کے عوام بالخصوص خواتین اور طلباء کو مبارکباد دی، جو اب نئی بسوں میں مفت سفر کرسکتے ہیں۔

انہوں نے سرکاری اور خانگی کالجس اور یونیورسٹیز کے طلباء کے لیے بس پاس کی مفت سہولت کا بھی اعلان کیا۔ عوام کو بہتر سہولتیں فراہم کرنے اپنی حکومت کے پابند عہد ہونے کا اعادہ کرتے ہوئے چنی نے کہا کہ 400 کروڑ روپئے کی لاگت سے 105 بس ٹرمنل تعمیر کیے جارہے ہیں اور ان کی تزئین نو کی جارہی ہے۔

 1406 نئے بس پرمٹ جاری کیے گئے ہیں اور ریاست میں 425 نئی بس روٹس کا اضافہ کیا جائے گا۔ گذشتہ 3 ماہ کے دوران وزیر ٹرانسپورٹ امریندر سنگھ راجہ کی کوششوں پر ان کی ستائش کرتے ہوئے چیف منسٹر نے کہا کہ گذشتہ 3 ماہ کے دوران محکمہئ ٹرانسپورٹ کا احیاء ہوا ہے۔

 غلطی کرنے والے بس آپریٹرس اور ٹیکس چوری کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی گئی ہے۔ چنی نے کہا کہ ریاستی ٹرانسپورٹ کو مافیا کے طور پر چلانے والوں کے خلاف کارروائی کے نتیجہ میں محکمہ کی آمدنی میں قابل لحاظ اضافہ ہوا ہے۔

 انہوں نے زور دے کر کہا کہ کسی کو بھی مسافرین سے زیادہ پیسے وصول کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی اور ایک شفاف، مؤثر اور کارکرد ٹرانسپورٹ میکانیزم ان کی حکومت کی اوّلین ترجیح ہے۔ وزیر ٹرانسپورٹ امریندر سنگھ راجہ نے بروقت کارروائی پر چیف منسٹر سے اظہارِ تشکر کرتے ہوئے کہا کہ گذشتہ 3 ماہ کے دوران محکمہ کی آمدنی میں یومیہ 1.50 کروڑ روپئے کا اضافہ ہوا ہے۔

ذریعہ
آئی اے این ایس

تبصرہ کریں

Back to top button