کشمیر میں 2 انکاؤنٹرس، 5 دہشت گرد ہلاک

پلوامہ کے نائرہ علاقہ میں انکاؤنٹر میں جیش کے 4 دہشت گرد مارے گئے جبکہ وسطی کشمیر کے ضلع بڈگام کے علاقہ چرارشریف میں لشکرطیبہ کا ایک عسکریت پسند ہلاک ہوا۔

سری نگر: جموں وکشمیر میں سیکیوریٹی فورسس کی ایک بڑی کامیابی میں جیش محمد کا ایک سرکردہ خودساختہ کمانڈرمارا گیا۔ وہ ان 5 دہشت گردوں میں شامل ہے جو وادی کے اضلاع پلوامہ اوربڈگام میں کل رات دوعلٰحدہ انکاؤنٹرس میں مارے گئے۔ عہدیداروں نے اتوار کے دن یہ بات بتائی۔

 جیش محمد کا کمانڈرزاہد وانی 2017ء سے سرگرم تھا۔ پلوامہ میں فوج کی وکٹر فوج کے جی او سی میجرجنرل پرشانت سریواستو کے ساتھ مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب میں انسپکٹرجنرل پولیس وجئے کمار نے بتایاکہ بندوقوں کی لڑائی ہفتہ کے دن شروع ہوئی تھی۔

پلوامہ کے نائرہ علاقہ میں انکاؤنٹر میں جیش کے 4 دہشت گرد مارے گئے جبکہ وسطی کشمیر کے ضلع بڈگام کے علاقہ چرارشریف میں لشکرطیبہ کا ایک عسکریت پسند ہلاک ہوا۔ انہوں نے کہا کہ زاہد وانی جیش کا سرکردہ کمانڈرتھا۔ سمیرڈار کے مارے جانے کے بعد وہ جیش کا ضلع کلکٹر بن گیاتھا۔ اصل میں وہ ساری وادی میں جیش کا سربراہ تھا۔

 آئی جی پی نے کہا کہ جاریہ ماہ 11انکاؤنٹرس میں 21 دہشت گردمارے گئے جن میں 8پاکستانی تھے۔ انہوں نے کہا کہ پہلی مرتبہ دہشت گردوں کی تعداد200 سے کم ہوگئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے جاریہ سال اس تعداد کو 100سے کم رکھنے کی پوری کوشش کی۔

دہشت گردوں کو مختلف راستوں سے اسلحہ وگولہ بارود مل رہا ہے۔ جموں علاقہ میں ہم نے ایسی35کوششوں میں ڈرونس کو ضبط کیا ہے۔ اسلحہ سڑک کے راستے بھی آتا ہے۔

ذریعہ
پی ٹی آئی

تبصرہ کریں

Back to top button