کلب ہاؤز ایپ پر مسلم خواتین کے خلاف بے ہودہ ریمارکس

کلب ہاؤز کنورزیشن کا ایک ویڈیو سوشیل میڈیا پر وائرل ہوا تھا جس کا ٹاپک ”مسلم گالس آر مور بیوٹیفل دیان ہندو گالس“ (مسلم لڑکیاں ہندو لڑکیوں سے زیادہ خوبصورت ہوتی ہیں) تھا۔

نئی دہلی: دہلی کمیشن فار ویمن نے منگل کے دن ان لوگوں کے خلاف فوری ایف آئی آر کا اندراج چاہا جنہوں نے آڈیو چیاٹ اپلیکیشن کلب ہاؤز میں مسلم خواتین کے تعلق سے مبینہ بے ہودہ ریمارکس کئے۔

صدر ڈی سی ڈبلیو سوامی ملیوال نے کہا کہ کسی نے ٹویٹر پر مجھے کلب ہاؤز ایپ کا تفصیلی آڈیو کنورزیشن ٹیاگ کیا جس میں مسلم خواتین اور لڑکیوں کو نشانہ بنایا گیا اور ان کے خلاف بے ہود جنسی تبصرے کرے۔

 انہوں نے کہا کہ خاطیوں کے خلاف سخت کارروائی ہونی چاہئے۔ پیر کے دن کلب ہاؤز کنورزیشن کا ایک ویڈیو سوشیل میڈیا پر وائرل ہوا تھا جس کا ٹاپک ”مسلم گالس آر مور بیوٹیفل دیان ہندو گالس“ (مسلم لڑکیاں ہندو لڑکیوں سے زیادہ خوبصورت ہوتی ہیں) تھا۔ کنورزیشن میں شرکاء کو مسلم خواتین اور لڑکیوں کے خلاف بے ہودہ ریمارکس کرتے سنا جاسکتا ہے۔

 کمیشن نے پولیس سے کہا کہ وہ فوری ایف آئی آر درج کرکے ملزمین کو گرفتار کرے۔ سواتی ملیوال نے کہاکہ دہلی پولیس کو کمیشن میں ایکشن ٹیکن رپورٹ (کارروائی رپورٹ) داخل کرنے 5 دن کا وقت دیا گیا۔ سواتی ملیوال نے سوشیل میڈیا پر پوچھا کہ پہلے Sulli Deals  بعد میں Bulli Bai اور اب کلب ہاؤز ایپ کا یہ معاملہ‘ یہ کب تک چلتا رہے گا؟۔

ذریعہ
آئی اے این ایس

تبصرہ کریں

Back to top button