کمسن بچوں اور 60 سال عمر کے افراد کو گھروں سے باہرنہ نکلنے کا مشورہ

تلنگانہ کے بشمول ملک کی دیگر ریاستوں میں کوروناانفیکشن کے بڑھتے واقعات کے دوران واضح اشارے سامنے آئے ہیں کہ اومیکرون کے ذیلی اقسام BA4 اورBA5انفیکشن سے پہلے متاثراورویکسین کے ذریعہ پیداقوت مدافعت سے بچنے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔

حیدرآباد: تلنگانہ کے بشمول ملک کی دیگر ریاستوں میں کوروناانفیکشن کے بڑھتے واقعات کے دوران واضح اشارے سامنے آئے ہیں کہ اومیکرون کے ذیلی اقسام BA4 اورBA5انفیکشن سے پہلے متاثر اور ویکسین کے ذریعہ پیداقوت مدافعت سے بچنے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔

اس لئے جی ایچ ایم سی اوراس کے اطراف واکناف کے اضلاع میں کووڈ 19 کے کیسس میں یومیہ اضافہ ہورہا ہے۔ کیسس میں اضافہ سے صاف پتہ چلتا ہے کہ اومیکرون کے یہ دونوں ویرینٹس‘قوت مدافعت سے بچنے کی صلاحیت رکھتے ہیں اس لئے جی ایچ ایم سی اوراس کے قرب وجوار کے اضلاع میں کووڈکے کیسس میں تیزی کے ساتھ اضافہ ہورہاہے۔

یہ اضلاع ماضی میں کووڈ کی تین لہروں کوجھیل چکے ہیں۔ سی ایس آئی آرکے سینئر سائنسداں ڈاکٹر ونود سکاریہ نے ٹوئٹ کرتے ہوئے BA5 کے اثرکواجاگر کیااورکہاکہ ہمیں اس بات پر غور کرناچاہئے کہ پہلے سے حاصل قوت مدافعت‘ اومیکرون کے ذیلی اقسام سے تحفظ فراہم نہیں کرسکتی۔

ماضی میں کووڈو کے انفیکشن کی لہر میں اس کی نوعیت چکردار رہی ہیں‘ ڈائرکٹر پبلک ہیلت ڈاکٹر جی سرینواس راؤ نے کہاکہ کووڈ انفیکشن سے بچنے کا واحد حل ماسک کا استعمال ہے۔

انہوں نے کہاکہ ہم نے ایڈوائیزری جاری کرتے ہوئے عوام پرزوردیا ہے کہ وہ بغیر ماسک کے گھرسے باہر نہ نکلیں‘10سال سے کم عمربچوں اور60سال سے زائدعمر کے افراد کوگھروں سے باہرنہ نکلنے کامشورہ دیتے ہوئے انہوں نے کہاکہ کووڈانفیکشن سے محفوظ رہنے کیلئے چنددنوں تک گھروں پر ہی رہنا بہتر رہے گا۔

ڈاکٹرسکاریہ نے ٹوئٹ کرتے ہوئے گھروں میں ہوا اور روشنی کا مناسب نظم رہنے سے انفیکشن کا خطرہ کم رہے گا۔

تبصرہ کریں

Back to top button