کے ٹی آرکی دھمکی پر کشن ریڈی چراغ پا

حیدرآباد: مرکزی وزیرسیاحت جی کشن ریڈی نے تلنگانہ کے وزیر بلدی نظم نسق وشہری ترقیات کے تارک راماراؤ کوشدید تنقیدکانشانہ بنایا جنہوں نے (کے ٹی آر) کنٹونمنٹ علاقہ میں لوکل ملٹری حکام کی جانب سے یکطرفہ طورپر سڑکیں اوردیگر امور بند کرنے پر اس علاقہ کوپانی اوربرقی سربراہی کومنقطع کرنے کی دھمکی دی تھی۔

ریڈی نے الزام عائد کیا کہ حکمراں جماعت ٹی آرایس‘مسلح افواج کی توہین کرنے کی تاریخ رکھتی ہے۔انہوں نے کہاکہ چیف منسٹرکے چندرشیکھرراؤ نے یہ کہتے ہوئے ہندوستانی فوج کا مذاق اڑایاتھا کہ وہ چین کے خلاف راہ فراراختیارکی ہے۔

کے سی آراورٹی آرایس کے ارکان اسمبلی سرجیکل اسٹرائک کے ثبوت فراہم کرنے کامطالبہ کرچکے ہیں۔اب کے ٹی آر‘مسلح افواج کوپانی اور برقی سربراہ نہ کرنے کی دھمکی دے رہے ہیں۔کشن ریڈی نے ٹوئٹ کرتے ہوئے یہ بات کہی۔

انہوں نے کہاکہ کے ٹی راماراؤ نے اپنے بیان میں دفاع کے جوانوں کی خدمات کی توہین کی ہے۔طاقت کرپٹ کرتی ہے!مطلق طاقت بالکل کرپٹ ہوتی۔ایک وزیر کی جانب سے مسلح افواج کوپانی اور برقی کی سربراہی روک دینے کی دھمکی دینا قابل مذمت ہے۔

اس طرح کے ٹی آر نے افواج کی توہین کی ہے۔ ریڈی نے کہاکہ کنٹونمنٹ کی سڑکوں کے مسئلہ کو حساسیت اور سنجیدگی کیساتھ نمٹنا ہو گا کیونکہ اس علاقہ میں موجوداداروں کو سیکوریٹی خطرات لاحق ہے لہذا اس مسئلہ کوانتہائی سنجیدگی سے حل کرنے کی ضرورت ہے۔

Back to top button