ہر گھر کو پانی کی سربراہی ریاستی حکومت کی اسکیم: کے ٹی آر

ٹی آر ایس کے کارگذار صدر اور وزیر بلدی نظم ونسق کے تارک راما راؤ نے ہر گھر کو پینے کے پانی کی سربراہی کے تعلق سے وزیر اعظم نریندر مودی کے بیان پر شدید ردعمل کا اظہار کیا ہے۔

حیدرآباد: ٹی آر ایس کے کارگذار صدر اور وزیر بلدی نظم ونسق کے تارک راما راؤ نے ہر گھر کو پینے کے پانی کی سربراہی کے تعلق سے وزیر اعظم نریندر مودی کے بیان پر شدید ردعمل کا اظہار کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ مذکورہ اسکیم کا سہرہ وزیر اعظم اپنے سر لینا چاہتے ہیں۔اُنہیں نے کہا ہے کہ”جل جیون مشن ہر گھر جل“ مہم کا ایک حصہ ہے۔لیکن وزیر اعظم اس اسکیم کا کریڈیٹ لینے کے خواہاں ہے۔

تارک راما راؤ نے وزیر اعظم سے کہا ہے کہ مشن بھگیرتااسکیم کیلئے مرکزی حکومت کا کیا اشتراک و تعاون ہے یہ اسکیم جوکہ ٹی آر ایس حکومت کی جانب سے تلنگانہ میں شروع کی گئی ہے۔

اس کے تحت ریاست کے تمام گھروں میں پینے کا پانی سربراہ کرنے کے انتظامات کئے گئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ اس سلسلہ میں مرکزی حکومت کا کوئی اشتراک و تعاون نہیں ہے۔

ریاستی وزیر تارک راما راؤ نے وزیر اعظم پر گمراہ کرنے کا الزام عائد کیا ہے۔اُنہوں نے کہا کہ تلنگانہ ریاست ملک کی ترقی میں اہم حصہ ادا کررہی ہے۔اس سلسلہ میں ترقیاتی اقدامات کا اُنہوں نے تذکر کیا اور کہا کہ ریاستی حکومت عوام کی خوشحالی خواہاں ہے۔

سوشل میڈیا مہم پر ردعمل کااظہار کرتے ہوئے انہوں نے کہا ہے کہ تلنگانہ میں 38 لاکھ مکانات کو پانی کی سربراہی کیلئے کنکشن دیا گیا ہے۔یہ کام جو کہ 2019 سے شروع کیا گیا صرف 3سال میں قابل لحاظ پیشرفت کی گئی جس سے خواتین کو کہیں زیادہ راحت فراہم ہوئی ہے۔

آئی اے این ایس کے بموجب تلنگانہ راشٹرا سمیتی(ٹی آر ایس کے کارگذار صدر ٹی کے راما راؤ نے اچھے دن آنے کے تعلق سے وزیر اعظم کے بیانات پرطنز کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایندھن کی قیمتوں میں اضافہ ہوتا جارہا ہے۔انہوں نے وزیر اعظم سے استفسار کیا کہ کیا یہ اچھے دن آر ہے ہیں۔

اُنہوں نے اس سلسلہ میں نریندر مودی کے سابق بیانات کا حوالہ دیا جبکہ وہ گجرات کے چیف منسٹر کی حیثیت سے قیمتوں میں اضافہ پر تنقید کیا کرتے تھے۔کے ٹی راما راؤ نے کہا ہے کہ وزیر اعظم کی جانب سے موثر ا قدامات کئے جانے کا تذکر کیا جاتا ہے لیکن وہ قیمتوں پر کنٹرول کرنے میں ناکام ہوگئے ہیں۔

جیسا کہ کانگریس کی زیر قیادت یو پی اے حکومت بھی عوامی مسائل کی تکمیل میں ناکام رہی حکومت کو چاہئے کہ وہ عوام کو درپیش مسائل کی ایکسوئی کی کوشش کریں لیکن مرکزی حکومت اس سلسلہ میں کوئی اقدامات کرنے میں ناکام دکھائی دے رہی ہے۔ اشیاء کی قیمتوں خصوصاً ایندھن کی قیمتوں میں رفتہ رفتہ اضافہ عوام خصوصاً غربا پر بوجھ ہوتا جارہا ہے۔

تبصرہ کریں

Back to top button