ہندو مہاپنچایت سبھا، بعض ٹویٹر یوزرس کے خلاف ایف آئی آر درج

دہلی پولیس نے اُن ٹویٹر یوزرس کے خلاف کیس درج کرلیا ہے جنہوں نے ہندو مہاپنچایت سبھا کے پس منظر میں متنازعہ مواد پوسٹ کیا تھا۔

نئی دہلی: دہلی پولیس نے اُن ٹویٹر یوزرس کے خلاف کیس درج کرلیا ہے جنہوں نے ہندو مہاپنچایت سبھا کے پس منظر میں متنازعہ مواد پوسٹ کیا تھا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ اس مواد سے دو فرقوں میں دشمنی اور نفرت کو بڑھاوا مل سکتا ہے۔ مکرجی نگر پولیس اسٹیشن میں ایف آئی آر درج ہوئی اور تحقیقات جاری ہیں۔

ڈپٹی کمشنر پولیس (ڈی سی پی) اوشا رنگنانی نے متنازعہ ٹویٹس کو شیئر کیا۔

اتوار کے دن شمال مغربی دہلی کے براڑی گراؤنڈ میں منعقدہ ہندو مہاپنچایت سبھا میں بعض مقررین بشمول یتی نرسنگھانند سرسوتی (پجاری ڈاسنہ دیوی مندر) اور سریش چوانکے (چیف ایڈیٹر سدرشن نیوز) نے ایسے الفاظ کا استعمال کیا تھا جن سے دو فرقوں کے درمیان دشمنی یا عداوت پیدا ہوسکتی ہے۔

تبصرہ کریں

Back to top button