ہنومان چالیسہ معاملہ، رکن پارلیمنٹ نونیت رانا کی قیامگاہ کے باہر شیوسینا کارکنوں کا ہنگامہ

رانا نے مہاراشٹر کے چیف منسٹر ادھو ٹھاکرے کی رہائش گاہ ماتوشری کے سامنے ہنومان چالیسہ کا پاٹھ کرنے کا اعلان کیا تھا۔ اس کے بعد شیوسینا کے کارکنوں کی بڑی تعداد محترمہ رانا کی رہائش گاہ کے باہر جمع ہو گئی۔

ممبئی: مہاراشٹر کے دارالحکومت ممبئی میں شیوسینا کے کارکنوں نے ہفتہ کو لوک سبھا کی رکن پارلیمنٹ نونیت رانا کی رہائش گاہ کے باہر ہنومان چالیسہ کے پاٹھ کے سلسلے میں زبردست ہنگامہ کیا جس کے بعد بھاری پولیس فورس تعینات کر دی گئی۔ رانا نے آج مہاراشٹر کے چیف منسٹر ادھو ٹھاکرے کی رہائش گاہ ماتوشری کے سامنے ہنومان چالیسہ کا پاٹھ کرنے کا اعلان کیا تھا۔ اس کے بعد شیوسینا کے کارکنوں کی بڑی تعداد محترمہ رانا کی رہائش گاہ کے باہر جمع ہو گئی۔

اس سے پہلے رکن پارلیمنٹ نے اعلان کیا تھا کہ وہ صبح 9 بجے ماتوشری پہنچیں گی اور ہنومان چالیسہ کا پاٹھ کریں گی۔ اس کے بعد شیوسینا کے کارکنوں نے ان کی رہائش گاہ کے باہر احتجاج شروع کر دیا جس کی وجہ سے وہ اپنی رہائش گاہ سے باہر نہیں آ سکیں۔ احتجاج کے پیش نظر ممبئی کے کھر میں محترمہ رانا کی رہائش گاہ کے باہر پولیس کی بھاری نفری موجود ہے۔

پولیس نے کسی بھی ناخوشگوار واقعہ کو روکنے کے لیے وزیر اعلیٰ کی رہائش گاہ کے ساتھ ساتھ کلا نگر کے علاقے میں سیکورٹی فورسز کو تعینات کیا ہے۔ دوسری طرف پولیس نے جمعہ کو ایم پی رانا کو ضابطہ فوجداری کی دفعہ 149 (سی آر پی سی) کے تحت نوٹس دیا تھا، ان سے کہا تھا کہ وہ امن خراب کرنے کی کوشش نہ کریں اور امن و امان کو برقرار رکھیں۔ پولیس نے کہا کہ اگر امن و امان کی صورتحال خراب ہوتی ہے تو اس کے لیے رکن پارلیمنٹ ذمہ دار ہوں گی۔

ذریعہ
یواین آئی

تبصرہ کریں

Back to top button