یوکرین سے واپس آنے والے طلبہ کی تعلیم سے متعلق دہلی ہائیکورٹ میں درخواست داخل

درخواست میں کہا گیا ہے کہ یوکرین سے بحفاظت نکال کر لائے گئے طلبا جن میں تقریباً دو ہزار طلبا شامل، ان کا مستقبل غیر یقینی صورتحال میں پھنس گیاہے۔

نئی دہلی: دہلی ہائی کورٹ میں یوکرین سے واپس آنے والے میڈیکل طلباء کی پڑھائی ملک کے میڈیکل کالجوں میں دوبارہ شروع کرنے سے متعلق مرکزی حکومت کو ہدایت دینے کے لئے ایک درخواست دائر کی گئی ہے۔ اوورسیز لیگل سیل کی طرف سے دائر اس درخواست میں عدالت سے استدعا کی گئی ہے کہ وہ مرکزی حکومت کو ہدایت دے کہ وہ ہنگامی حالات میں یوکرین سے واپس آنے والے میڈیکل طلباء کے لیے ملک کے اندر میڈیکل کالجوں میں اپنی تعلیم مکمل کرنے کے انتظامات کرے۔

درخواست گزار نے اپنی درخواست میں کہا کہ اس بارے میں باضابطہ طور پر ابھی تک کچھ نہ کئے جانے پر عدالت میں عرضی دائر کی گئی ہے ۔ درخواست میں کہا گیا ہے کہ یوکرین سے بحفاظت نکال کر لائے گئے طلبا جن میں تقریباً دو ہزار طلبا شامل، ان کا مستقبل غیر یقینی صورتحال میں پھنس گیاہے۔ درخواست میں کہا گیا کہ آئین کے آرٹیکل 21 کے تحت زندگی کے حق کی ضمانت میں ان ہندوستانی طلباء کا ملک میں تعلیم مکمل کرنے کا حق بھی شامل ہے، جو موجودہ جنگ جیسی صورتحال میں مجبوری میں بیرون ملک سے واپس آئے ہیں۔

درخواست گزار اس درخواست کے ذریعہ مرکزی حکومت اور نیشنل میڈیکل کمیشن کے لئے عدالت کی جانب سے ہدایت دینے کی مانگ کر رہا ہے تاکہ یوکرین سے واپس آنے والے ہندوستانی میڈیکل طلباء کی ملک کے میڈیکل کالجوں میں تعلیم شروع کرنے کے لیے مناسب اقدامات اٹھائے جائیں۔

ذریعہ
یواین آئی

تبصرہ کریں

Back to top button