یوکرین پر روسی میزائل حملہ، 18 افراد ہلاک

یوکرین کے ایم پی رومن ہریشچک نے بھی مبینہ حملے کی ایک ویڈیو شیئر کرتے ہوئے کہاکہ "ذرا تصور کریں: آپ جانتے ہیں اور محسوس کرتے ہیں کہ اس سے نکلنے کا کوئی راستہ نہیں ہے۔

کیف: یوکرین کے حکام نے جمعہ کو دعویٰ کیا کہ اوڈیسا میں ایک اپارٹمنٹ کی عمارت اور ایک تفریحی مرکز پر تین روسی میزائلوں کے حملے میں دو بچوں سمیت 18 افراد ہلاک اور 31 دیگر زخمی ہو گئے۔

گورنر اور اوڈیسا ریجنل ملٹری ایڈمنسٹریشن کے سربراہ میکسم مارچینکو نے ٹیلی گرام پر کہاکہ "بحیرہ اسود سے ٹی یو 22 ٹیکٹیکل طیارے کے ذریعے رات میزائل حملہ اوڈیسا کے علاقے کے بیلگوروڈ-ڈنیسٹر ضلع میں کیا گیا۔ تین ایکس-22 میزائل ایک اپارٹمنٹ کی عمارت اور ایک تفریحی مرکز پر فائر کیے گئے۔

انہوں نے کہا کہ صبح 9 بجے تک 2 بچوں سمیت 18 متاثرین کی شناخت ہو چکی ہے اور 31 افراد جن میں چار زخمی بچے اور ایک حاملہ خاتون شامل ہیں، کو ہسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔ باقی آٹھ کو طبی امداد دی گئی۔ ملبے سے تین بچوں سمیت آٹھ افراد کو بچا لیا گیا۔ ریسکیو کام جاری ہے۔”

یوکرین کے ایم پی رومن ہریشچک نے بھی مبینہ حملے کی ایک ویڈیو شیئر کرتے ہوئے کہاکہ "ذرا تصور کریں: آپ جانتے ہیں اور محسوس کرتے ہیں کہ اس سے نکلنے کا کوئی راستہ نہیں ہے۔

دی گارڈین کے مطابق اوڈیسا میں ایک بلند و بالا رہائشی عمارت پر روسی میزائلوں کے حملے کے بعد لوگ اپارٹمنٹس میں پھنسے ہوئے ہیں۔ اس ہفتے کے شروع میں یوکرین کے شہر کریمینچگ میں ایک مال پر روسی میزائل حملے میں 18 افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

تبصرہ کریں

Back to top button