آدھار کارڈ شہریت کا ثبوت نہیں : کرن رجیجو

مرکزی وزیر قانون کرن رجیجو نے ایک تحریری سوال کا جواب دیتے ہوئے بتایاکہ آدھارکارڈ اور ووٹر آئی ڈی کارڈ کو مربوط کرنے کے نتیجہ میں جو ڈاٹا محفوظ ہوگا، اُس تک کسی کو رسائی حاصل نہیں ہوگی۔

نئی دہلی: مرکزی حکومت نے آج لوک سبھا کو بتایاکہ آدھار کارڈ اور ووٹر آئی ڈی کارڈ کو مربوط کرنے کے بعد اِس کے ڈاٹا تک نہ کسی تیسرے فریق اور نہ ہی سرکاری حکام کی کوئی رسائی ہوگی۔

مرکزی وزیر قانون کرن رجیجو نے ایک تحریری سوال کا جواب دیتے ہوئے بتایاکہ آدھارکارڈ اور ووٹر آئی ڈی کارڈ کو مربوط کرنے کے نتیجہ میں جو ڈاٹا محفوظ ہوگا، اُس تک کسی کو رسائی حاصل نہیں ہوگی۔

حکومت سے دریافت کیا گیا تھا کہ آیا آدھار کارڈ اور ووٹر آئی ڈی کارڈ کو مربوط کرنے کے بعد ڈاٹا تک کسی کی رسائی ہوسکتی ہے یا نہیں۔

کرن رجیجو نے جواب دیا کہ دونوں کارڈس کے ارتباط کے بعد ایسا کوئی لنک ہی تخلیق نہیں ہوگا کہ اُس تک رسائی حاصل کی جاسکے۔

ایک اور سوال یہ بھی پوچھا گیا کہ آیا حکومت شہریت کو تسلیم کرنے کیلئے کوئی پروٹوکول وضع کررہی ہے اور آیااِس کیلئے آدھار کارڈ کو بنیاد بنایاجارہا ہے تو کرن رجیجو نے بتایاکہ آدھار کارڈ شہریت کا ثبوت نہیں ہے۔

واضح ہوکہ پارلیمنٹ میں حال ہی میں ایک مسودہ قانون منظور کیاگیا جس کی رو سے آدھار ڈاٹا بیس کو فہرست رائے دہندگان سے مربوط کردیا جائے گا تاکہ جعلی ووٹوں کا صفایا کیاجاسکے۔

ذریعہ
پی ٹی آئی

تبصرہ کریں

Back to top button