اقوام متحدہ کے سربراہ انٹونیو گٹریس کی پوٹین سے ملاقات

اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل انٹونیو گٹریس کی روسی صدر ولادیمیر پوٹین کے ساتھ گزشتہ روز کریملن میں ملاقات ہوئی۔ ایک گھنٹے تک جاری رہنے والی اس ملاقات میں یوکرینی شہر ماریوپول کے ایک گیس پلانٹ میں پھنسے افراد کے بحفاظت انخلا پر اتفاق رائے کیا گیا۔

کریملن: اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل انٹونیو گٹریس کی روسی صدر ولادیمیر پوٹین کے ساتھ گزشتہ روز کریملن میں ملاقات ہوئی۔ ایک گھنٹے تک جاری رہنے والی اس ملاقات میں یوکرینی شہر ماریوپول کے ایک گیس پلانٹ میں پھنسے افراد کے بحفاظت انخلا پر اتفاق رائے کیا گیا۔

اقوام متحدہ کی طرف سے جاری کردہ بیان کے مطابق اس بات پر اتفاق ہوا ہے کہ روسی فوجوں کے گھیرے میں آئے ہوئے ماریوپول کے آزوفسٹال اسٹیل کمپلیکس میں پھنسے لوگوں کے انخلا میں اقوام متحدہ اور ریڈکراس کو کردار ادا کرنا چاہیے۔ اطلاعات کے مطابق اس پلانٹ کے نیچے ایک ہزار عام شہری اور دو ہزار یوکرینی جنگجو پھنسے ہوئے ہیں۔

گوٹیرش اب کییف جا کر یوکرینی صدر وولودیمیر زیلنسکی سے ملاقات کریں گے۔ اقوام متحدہ کے سربراہ انتونیو گوتریس یوکرین جنگ پر مذاکرات کے لیے روس پہنچ گئے جہاں وزیر خارجہ سے ملاقات میں فوری طور پر جنگ بندی کا مطالبہ کیا۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق اقوام متحدہ کے جنرل سیکرٹری انتونیو گوتریس مختصر دورے پر وفد کے ہمراہ روس پہنچ گئے جہاں وہ صدر ولادیمیر پوٹن سے بھی ملاقات کریں گے۔اقوام متحدہ کے جنرل سیکرٹری کا استقبال روسی وزیر خارجہ سرگئی لارووف نے کیا۔

دونوں رہنماوں نے بات چیت کے دوران یوکرین میں جنگ سے پیدا ہونے والی صورت حال پر سیر حال گفتگو کی۔انتونیو گوتریس نے روسی وزیر خارجہ سرگئی لارووف سے یوکرین میں فوری طور پر جنگ بندی کا مطالبہ کیا جس پر انھوں نے یوکرین کے نیوٹرل حیثیت کا مطالبہ کیا۔

اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل کا روس کا دورہ ابھی جاری ہے اور وہ روسی صدر ولادیمیر پوٹن سے بھی ملاقات کریں گے جس کے بعد جمعرات کو یوکرین جائیں گے اور صدر زیلنسکی سے ملاقات کریں گے۔

تبصرہ کریں

Back to top button