تشدد کے لئے مسلم قائدین اور لیفٹ لبرلس ذمہ دار: وی ایچ پی

وشوا ہندو پریشد(وی ایچ پی) نے پیر کے دن کہا کہ رام نومی کے موقع پر ملک بھر میں ”حملوں‘‘ کے لئے اقلیتی فرقہ کے قائدین اور بایاں بازو کے آزاد خیال عناصر (لیفٹ لبرلس) کو موردِ الزام ٹھہرانا چاہئے۔

نئی دہلی: وشوا ہندو پریشد(وی ایچ پی) نے پیر کے دن کہا کہ رام نومی کے موقع پر ملک بھر میں ”حملوں‘‘ کے لئے اقلیتی فرقہ کے قائدین اور بایاں بازو کے آزاد خیال عناصر (لیفٹ لبرلس) کو موردِ الزام ٹھہرانا چاہئے۔

اس نے انہیں خبردار کیا کہ وہ اپنے ماننے والوں کو تشدد کے راستہ پر نہ چلائیں۔

ویڈیو پیام میں جوائنٹ جنرل سکریٹری وی ایچ پی سریندر جین نے مدھیہ پردیش‘ گجرات‘ جھارکھنڈ اور جے این یو میں اتوار کے تشدد کو ”بدبختانہ“ قراردیا اور کہا کہ سبھی کی ذمہ داری بنتی ہے کہ وہ یقینی بنائیں کہ ایسے واقعات نہ ہوں۔

سریندر جین نے کہا کہ وہ تمام عیسائی مشنریز‘ جہادیوں اور لیفٹ لبرلس سے اپیل کرتے ہیں کہ وہ سمجھ لیں کہ ہندو سماج اس قسم کا تشدد برداشت نہیں کرے گا۔

انہوں نے کہا کہ یہ سبھی کی ذمہ داری ہے۔ میں مسلم رہنماؤں سے اپیل کرتا ہوں کہ وہ اپنے معاشرہ کو ایسے راستہ پر نہ چلائیں۔ یہ نہ تو آپ کے مفاد میں ہے اور نہ ہی سماج کے مفاد میں۔

تبصرہ کریں

Back to top button