تلنگانہ میں دھان کی خریدی بحران سنگین ہونے کا امکان

اجلاس کے بعد ریاستی وزیر نرنجن ریڈی نے میڈیا کے نمائندوں کو بتایا کہ مرکز نے جو موقف اختیار کیا ہے، وہ انتہائی بدبختانہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم مایوسی کے ساتھ دہلی سے حیدرآباد روانہ ہورہے ہیں۔

حیدرآباد: تلنگانہ میں جاری دھان خریدی بحران مزید سنگین ہونے کا امکان ہے کیونکہ ریاستی حکومت نے مرکز سے دھان خریدی کا تیقن حاصل کرنے میں ناکام رہی ہے۔ رواں خریف سیزن میں سست روی سے کسانوں سے دھان خریدی عمل پر ریاستی حکومت پر بڑھتے دباؤ کے درمیان مرکزی حکومت نے ریاست سے دھان خریدنے کے ہدف میں اضافہ کرنے سے انکار کردیا۔

ریاستی حکومت نے مرکزسے دھان خریدی کے ٹارگٹ میں اضافہ کا مطالبہ کیا تھا مگر مرکز کی بی جے پی حکومت نے حکومت تلنگانہ کے اس مطالبہ کو قبول نہیں کیا ہے۔ ریاستی وزیر زراعت ایس نرنجن ریڈی کی زیر قیادت ریاستی وزراء پر مشتمل ایک وفد نے کل دہلی میں مرکزی وزیر پیوش گوئل سے ملاقات کی تھی۔ مرکزی وزیر اغذیہ و عوامی نظام تقسیم گوئل نے ریاستی وفد پر واضح کر دیا کہ مرکزی حکومت، آنے والے ربیع سیزن میں ریاست تلنگانہ سے اُبلے چاول (بائلڈ رائس) نہیں خریدسے گا۔

 اجلاس کے بعد ریاستی وزیر نرنجن ریڈی نے میڈیا کے نمائندوں کو بتایا کہ مرکز نے جو موقف اختیار کیا ہے، وہ انتہائی بدبختانہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم مایوسی کے ساتھ دہلی سے حیدرآباد روانہ ہورہے ہیں۔ وزیر نے بتایا کہ مرکز نے خریف سیزن میں ریاست سے کتنا دھان خریدے گا، اس بارے میں حقیقی صورتحال سامنے نہیں آئی ہے بتایا جاتا ہے کہ فوڈ کارپوریشن آف انڈیا (ایف سی آئی) نے 45 لاکھ ٹن دھان خریدنے کی یقین دہانی کرائی ہے۔

مرکز اس مسئلہ پر ذمہ داریوں سے راہ فرار اختیار کررہا ہے۔ نرنجن ریڈی نے کہا کہ مرکز نے پہلے ریاستی حکومت کے اس دعویٰ کو قبول نہیں کیا کہ تلنگانہ میں 62 لاکھ ایکڑ اراضی پر دھان کی کاشت کی گئی۔ اس دعویٰ کو قبول کرنے کیلئے مرکز ٹال مٹول کی پالیسی اختیار کرتا رہا مگر سٹلائٹ سروے کے بعد مرکز نے اس حقیقت کو تسلیم کرلیا۔ مرکزی وزیر نے دو سیزنوں (خریف اور ربیع) میں دھان کی خریداری نشانہ کے تعین کے مطالبہ کو نظر ا نداز کردیا اور کہا کہ ایسا ممکن نہیں ہے۔

مرکزی وزیر پیوش گوئل نے ریاستی وفد کو بتایا کہ اس مسئلہ کو مرکزی حکومت کی مجوزہ کمیٹی حل کرے گی جسے تین زرعی قوانین کی تنسیخ کا جائزہ لینے کیلئے بتایا گیا تھا۔یہ کمیٹی، اقل ترین امدادی قیمت، سالانہ ٹارگٹ کے تعین اور متبادل فصلوں کی سفارشات پیش کرے گی۔ ریاستی حکومت کے مطالبہ کے باوجود مرکز نے واضح کردیا کہ اگلے سیزن میں وہ بائلڈ رائس نہیں خریدے گا۔ ریاستی وفد نے مرکزی وزیر کی توجہ اس جانب مبذول کرائی کہ تلنگانہ بی جے پی قائدین ریاست کے کسانوں کو دھان کی کاشت کی ترغیب دے رہے ہیں جس پر پیوش گوئل نے کہا کہ وہ تلنگانہ کے بی جے پی قائدین کو طرز عمل تبدیل کرنے کی ہدایت دیں گے۔ مرکزی حکومت نے رواں سیزن میں دھان کی خریدی کے ٹارگٹ میں اضافہ سے متعلق حکومت تلنگانہ کے مطالبہ کو مسترد کردیا بتایا جاتا ہے کہ چیف منسٹر اس مسئلہ پر غور وخوض کیلئے کابینہ کااجلاس طلب کریں گے۔ ایک یا دو دنوں کے اندر مستقبل کے لائحہ عمل کو قطعیت دیں گے۔

ذریعہ
آئی اے این ایس

تبصرہ کریں

Back to top button