تلنگانہ میں قبل از وقت انتخابات خارج از امکان: کے سی آر

پارٹی آفس تلنگانہ بھون میں خطاب کرتے ہوئے انہوں نے ریاست میں قبل ازوقت انتخابات کے متعلق جاری قیاس آرائیوں کا خاتمہ کرتے ہوئے کہاکہ ریاست میں قبل ازوقت انتخابات منعقد کرنے کا سوال ہی نہیں اُٹھتا۔

حیدرآباد: چیف منسٹر کے چندرشکھررراؤ نے واضح کیا کہ ریاست میں قبل ازوقت انتخابات کے انعقاد کا کوئی امکان نہیں ہے۔

آج پارٹی آفس تلنگانہ بھون میں خطاب کرتے ہوئے انہوں نے ریاست میں قبل ازوقت انتخابات کے متعلق جاری قیاس آرائیوں کا خاتمہ کرتے ہوئے کہاکہ ریاست میں قبل ازوقت انتخابات منعقد کرنے کا سوال ہی نہیں اُٹھتا۔

چیف منسٹر آج ٹی آر ایس پارلیمنٹری اور لیجسلیٹیو پارٹی کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کررہے تھے۔ چیف منسٹر نے واضح کیا کہ حکومت کی میعاد کی تکمیل کیلئے ڈھائی سال کا عرصہ باقی ہے اور عوام کا دوبارہ خط اعتماد حاصل کرنے سے قبل کئی ترقیاتی کاموں کو انجام دینا باقی ہے۔

انہوں نے پارٹی قائدین خاص کر منتخبہ عوامی نمائندوں سے آئندہ پارلیمنٹ واسمبلی انتخابات میں اور زیادہ حلقوں پر کامیابی حاصل کرنے مزید جوش وجذبہ سے کام کرنے کی اپیل کی اورپارٹی کے عوامی نمائندوں کو عوام کے مسائل حل کرنے کی ہدایت دی ہے۔

اطلاعات کے مطابق چیف منسٹر‘ ورنگل میں 15 نومبر کو منعقد شدنی تلنگانہ وجئے گرجنا جلسہ عام کو کچھ اس انداز میں منعقد کرنا چاہتے ہیں جس سے مخالفین کو سخت پیغام پہنچے اور واضح ہوجائے کہ ٹی آر ایس ہی تلنگانہ کی شہ رگ ہے۔ اس جلسہ عام کے انعقاد کے امور کی ذمہ داری پارٹی کے کار گذار صدر کے ٹی راماراؤ کو تفویض کی گئی ہے۔

جلسہ عام کا انعقاد ٹی آر ایس کے قیام کے دو دہوں کے مکمل ہونے کے ضمن میں کیاجارہا ہے۔ جلسہ عام کے انعقاد سے قبل تلنگانہ بھون میں روزانہ 20 اسمبلی حلقوں کے قائدین وکارکنوں کے ساتھ تیاری مشاورتی اجلاس منعقد کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ شرکاء کو جلسہ گاہ تک پہنچانے بڑی تعداد میں بسوں سے استفادہ کیاجائے گا۔

آج تلنگانہ بھون میں منعقدہ اجلاس کے دوران چیف منسٹر نے پارٹی کے اراکین مقننہ کو بتایاکہ حضور آباد میں پارٹی امیدوار جی سرینواس کی کامیابی تقریباً یقینی ہے۔ پارٹی امیدوار زبردست اکثریت سے کامیابی حاصل کریں گے۔ حلقہ میں بی جے پی پر ٹی آر ایس امیدوار کو 13فیصد اکثریت حاصل ہے۔

پارٹی ذرائع کے مطابق کے سی آر‘ 27 اکتوبر کو حضور آباد میں انتخابی جلسہ سے خطاب کریں گے۔ دوسری طرف آج منعقدہ اجلاس میں اہم فیصلہ لیتے ہوئے کووڈ 19 رہنمایانہ خطوط پر عمل کرتے ہوئے ٹی آر ایس پلینری اجلاس میں شرکاء کی تعداد کو 14,000 سے کم کرتے ہوئے 6000 کردینے کا فیصلہ کیا گیا۔پارٹی قیادت کوہر اسمبلی حلقہ سے 50 افراد کی شرکت کی توقع ہے۔ یہ اجلاس 25اکتوبر کو منعقد ہوگا۔

ذریعہ
منصف نیوز بیورو

تبصرہ کریں

Back to top button