تین سارق گرفتار، 41 تولے مسروقہ زیورات برآمد

ٹیکنیکل ثبوت اور سی سی ٹی وی فوٹیج کی مدد سے ملزمین کی گرفتاری عمل میں لائی۔ ملزم جی سدھاکر اس سے قبل قفل شکنی کی 59 وارداتوں میں ملوث تھا اس کے خلاف پی ڈی ایکٹ بھی لاگو کیا گیا تھا۔

حیدرآباد: چکڑ پلی پولیس سنٹرل زون نے آج 3سارقوں بشمول مسروقہ مال حاصل کرنے والی خاتون کو گرفتار کرلیا اور ملزمین کے قبضے سے 41تولے طلائی زیورات برآمد کرلئے۔

کمشنر پولیس حیدرآباد انجنی کمار نے ہفتہ کے روز میڈیا کانفرنس میں بتایا کہ پولیس نے 27 سالہ جی سدھا کر عرف سائی آٹو رکشا ڈرائیور، انتھونی کاکہ عرف ڈائنجر ساکن سری رام نگر بوجہ گٹہ مہدی پٹنم متوطن کنڈپلی ضلع کرنول اور57 سالہ محمد ایوب عرف بڑا ایوب ساکن نبیل کالونی صلالہ بارکس متوطن چیوڑلہ ضلع رنگاریڈی ا ور ایک ملزم کی بیوی جی ناگامنی عرف ناگامنی بجی امولا کو جو مسروقہ مال حاصل کرتی تھی، گرفتار کرلیا گیا۔

انہوں نے بتایا کہ21 اکتوبر 2021 کو گگن محل سوامی نیلائم دومل گوڑہ میں سرقہ کی واردات پیش آئی تھی جس میں قفل شکنی کے ذریعہ سارقین مکان میں داخل ہوئے اور اسکروڈرائیور سے الماری کا قفل توڑ کر زیورات کا سرقہ کیا تھا۔

ٹیکنیکل ثبوت اور سی سی ٹی وی فوٹیج کی مدد سے ملزمین کی گرفتاری عمل میں لائی۔ ملزم جی سدھاکر اس سے قبل قفل شکنی کی 59 وارداتوں میں ملوث تھا اس کے خلاف پی ڈی ایکٹ بھی لاگو کیا گیا تھا۔

ملزم کو کے پی ایچ بی پولیس اور سرور نگر پولیس نے گرفتار کیا تھا اور اسے عدالتی تحویل میں دے دیا گیا تھا۔ کمشنر پولیس نے بتایا کہ محمد تبریز داود شیخ اور دیگر دوملزمین کے پاس سے مزید طلائی زیورات برآمد کرلئے جائیں گے۔

اس سلسلہ میں پولیس ٹیم کو ممبئی روانہ کیا جائے گا۔ سنٹرل زون جائنٹ کمشنر پی وشوا پرساد، جائنٹ کمشنر پولیس رمناریڈی، ایڈیشنل ڈی سی پی سنٹرل زون، اے سی پی سی ایچ سریدھر(چکڑ پلی ڈیویژن) انسپکٹر کے سنجے کمار نے یہ گرفتاری عمل میں لائی۔

ذریعہ
منصف نیوز بیورو

تبصرہ کریں

Back to top button