جنرل بپن راوت اور اہلیہ ہیلی کاپٹر حادثہ میں ہلاک

فضائیہ نے ایک ٹویٹ میں جنرل راوت کی موت کی تصدیق کی۔ فضائیہ نے کہا کہ انتہائی افسوس کے ساتھ اس بات کی تصدیق کی جا رہی ہے کہ اس افسوسناک واقعہ میں جنرل راوت، ان کی اہلیہ اور 11 دیگر افراد کی موت ہو گئی ہے۔

نئی دہلی: ملک کے پہلے چیف آف ڈیفنس اسٹاف جنرل بپن راوت اور ان کی اہلیہ مدھولیکا راوت اور دیگر 11 افراد کی آج اس وقت موت ہو گئی جب تمل ناڈو کے کنور میں ائر فورس کا ایک ہیلی کاپٹر گر کر تباہ ہو گیا فضائیہ نے ایک ٹویٹ میں یہ جانکاری دی  ہیلی کاپٹر میں سوار گروپ کیپٹن ورون سنگھ حادثے میں زخمی ہو گئے اور ان کا ویلنگٹن کے ملٹری ہسپتال میں علاج کیا جا رہا ہے جنرل راوت ائر فورس کے ایم آئی 17 ہیلی کاپٹر میں ویلنگٹن کے ڈیفنس سروسز کالج میں ایک تقریب میں شرکت کے لیے جا رہے تھے۔

 ان کے ساتھ ہیلی کاپٹر میں 14 افراد سوار تھے۔ ہیلی کاپٹر ٹاملناڈو کے ضلع نیلگیری کے کنور علاقہ میں سلور سے ٹیک آف کرنے کے بعد گر کر تباہ ہو گیا۔ جنرل راوت کی موت پر اپنے رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ نے کہا کہ ان کی موت سے ملک اور مسلح افواج کو ناقابل تلافی نقصان پہنچا ہے۔

ایک ٹویٹ پیغام میں سنگھ نے کہاکہ "چیف آف ڈیفنس اسٹاف جنرل بپن راوت، ان کی اہلیہ اور مسلح افواج کے دیگر 11 عہدیداروں کی اچانک موت سے انہیں دلی تکلیف ہوئی ہے۔ ان کی بے وقت موت ملک اور مسلح افواج کیلئے ناقابل تلافی نقصان ہے۔‘‘

فضائیہ نے ایک ٹویٹ میں جنرل راوت کی موت کی تصدیق کی۔ فضائیہ نے کہا کہ انتہائی افسوس کے ساتھ اس بات کی تصدیق کی جا رہی ہے کہ اس افسوسناک واقعہ میں جنرل راوت، ان کی اہلیہ اور 11 دیگر افراد کی موت ہو گئی ہے۔ فضائیہ نے کہا کہ ہیلی کاپٹر میں سوار گروپ کیپٹن ورون سنگھ اس حادثے میں زخمی ہوگئے ہیں اور ان کا ویلنگٹن کے ملٹری ہسپتال میں علاج کیا جا رہا ہے۔

ذریعہ
یواین آئی

تبصرہ کریں

Back to top button