جنرل بپن راوت کو مانو کا خراج۔ شمع جلوس کا اہتمام

کینڈل لائٹ مارچ مانو کی اندر کمار گجرال عمارتِ انتظامی سے شروع ہو کر بابِ علم پر اختتام پذیر ہوا۔

حیدرآباد: مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی میں 10 دسمبر 2021 کو چیف آف ڈیفنس اسٹاف (CDS) جنرل بپن راوت، ان کی اہلیہ اور مسلح افواج کے 11 دیگر اہلکاروں کی یاد میں مومی شمعیں روشن کر کے خراج عقیدت پیش کیا گیا۔

جنرل راوت اور دیگر افراد 8 دسمبر کو تمل ناڈو کے کنور میں ہیلی کاپٹر کے المناک حادثے میں شہید ہوگئے تھے۔

پروفیسر صدیقی محمد محمود، رجسٹرار انچارج، پروفیسر محمد فریاد، صدر نشین توسیعی سرگرمیاں، لیفٹیننٹ ایم اے مجیب، ایسوسی ایٹ این سی سی آفیسر، ڈاکٹر وقار النساء، پرووسٹ گرلز ہاسٹل، ڈاکٹر معراج احمد، اسسٹنٹ پروفیسر، ایم سی جے، ڈاکٹر اقبال خان اور مانو کے این سی سی کیڈٹس، این ایس ایس کے طلبہ نے جنرل راوت کی یاد میں منعقدہ مارچ میں شرکت کی۔

کینڈل لائٹ مارچ مانو کی اندر کمار گجرال عمارتِ انتظامی سے شروع ہو کر بابِ علم پر اختتام پذیر ہوا۔

اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے پروفیسر صدیقی محمود نے کہا کہ جنرل بپن راوت کی موت قوم کے لیے بہت بڑا نقصان ہے۔ ہندوستان ان کی خدمات کو کبھی فراموش نہیں کرے گا۔

پروفیسر محمد فریاد نے لواحقین اور مسلح افواج سے تعزیت کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ہندوستانی فوج اور ہندوستانی فضائیہ اور پورا ملک اس بڑے نقصان پر سوگوار ہے۔شرکاءنے دو منٹ کی خاموشی بھی منائی۔

ذریعہ
پریس نوٹ

تبصرہ کریں

Back to top button