جوہر یونیورسٹی کیس، اعظم خان کی شرط ِ ضمانت پر روک

سپریم کورٹ نے جمعہ کے دن سماج وادی پارٹی رکن اسمبلی اعظم خان پر ہائی کورٹ کی شرائط ِ ضمانت میں ایک پر روک لگادی۔

نئی دہلی: سپریم کورٹ نے جمعہ کے دن سماج وادی پارٹی رکن اسمبلی اعظم خان پر ہائی کورٹ کی شرائط ِ ضمانت میں ایک پر روک لگادی۔

ہائی کورٹ نے ضلع مجسٹریٹ(کلکٹر) رام پور کو ہدایت دی تھی کہ جوہر یونیورسٹی کیمپس کی ضبط کردہ اراضی اپنے کنٹرول میں لے لے۔

جسٹس ڈی وائی چندرچوڑ اور جسٹس بیلا ایم ترویدی پر مشتمل ویکیشن بنچ نے کہا کہ پہلی نظر میں ایسا لگتا ہے کہ الٰہ آباد ہائی کورٹ کی یہ شرط ِ ضمانت زیادتی اور دیوانی عدالت کی ڈکری جیسی ہے۔

بنچ نے اعظم خان کی درخواست پر حکومت ِ اترپردیش سے جواب طلب کیا جنہوں نے جوہر یونیورسٹی معاملہ میں الٰہ آباد ہائی کورٹ کی عائد کردہ شرط کو چیلنج کیا تھا۔

سینئر وکیل کپل سبل نے اعظم خان کی طرف سے پیش ہوتے ہوئے کہا کہ ضلع مجسٹریٹ رام پور نے نوٹس جاری کی ہے کہ جواہر یونیورسٹی کی عمارتیں خالی کردی جائیں۔ بنچ نے کہا کہ وہ ہائی کورٹ کی شرط پر روک لگارہی ہے اور اس کی سماعت تعطیلات کے بعد ہوگی۔

تبصرہ کریں

Back to top button