حجاب تنازعہ‘ سپریم کورٹ سماعت پر آمادہ

چیف جسٹس این وی رمنا‘ جسٹس کرشنا مراری اور جسٹس ہیما کوہلی پر مشتمل بنچ نے درخواست گزاروں کی وکیل میناکشی اروڑہ کی اس بات کا نوٹ لیا کہ فوری سماعت کی ضرورت ہے۔ چیف جسٹس نے کہا کہ میں اس کی لسٹنگ کروں گا‘ 2 دن انتظار کریں۔

نئی دہلی: سپریم کورٹ نے منگل کے دن آمادگی ظاہر کی کہ وہ حجاب معاملہ میں کرناٹک ہائی کورٹ کے فیصلہ کو چیلنج کرتی درخواسوں کی سماعت کرے گی۔ چیف جسٹس این وی رمنا‘ جسٹس کرشنا مراری اور جسٹس ہیما کوہلی پر مشتمل بنچ نے درخواست گزاروں کی وکیل میناکشی اروڑہ کی اس بات کا نوٹ لیا کہ فوری سماعت کی ضرورت ہے۔ چیف جسٹس نے کہا کہ میں اس کی لسٹنگ کروں گا‘ 2 دن انتظار کریں۔

 کرناٹک ہائی کورٹ کے فیصلہ کے خلاف سپریم کورٹ میں کئی درخواستیں داخل ہوئی تھیں۔کرناٹک ہائی کورٹ نے اپنے فیصلہ میں حجاب کو لازمی مذہبی رواج کا حصہ ماننے سے انکار کردیا تھا اور کہا تھا کہ اسے دستور کی دفعہ 25کے تحت تحفظ نہیں مل سکتا۔

 ہائی کورٹ نے گورنمنٹ پری یونیورسٹی گرلز کالج اُڈپی کی بعض طالبات کی داخل کردہ درخواستوں کو خارج کردیا تھا جنہوں نے کلاس روم کے اندر حجاب پہننے کی اجازت مانگی تھی۔ ایک درخواست میں کہا گیا کہ ہائی کورٹ یہ سمجھنے سے قاصر رہی کہ حجاب کا حق دستور کی دفعہ 21 کے تحت پرائیویسی کے حق کے دائرہ میں آتا ہے۔

ذریعہ
پی ٹی آئی

تبصرہ کریں

Back to top button