جامع مسجد سری نگر میں نماز جمعہ کی ادائیگی پرپابندی،اوقاف کی برہمی

بیان میں کہا گیاکہ ہم نے بار بار واضح کیا ہے کہ حکمرانوں کا یہ طرز عمل سراسر مداخلت فی الدین اور مسلمانوں کے مذہبی جذبات اور احساسات کو مجروح کرنے کے مترادف ہے جو ہرگز قابل قبول نہیں ہے۔

سری نگر: اوقاف جامع مسجد سری نگر نے تاریخی جامع مسجد میں نماز جمعہ کی ادائیگی پر پابندی پر برہمی کا اظہار کیا ہے۔

انجمن نے جمعہ کے روز اپنے ایک بیان میں کہا کہ انجمن اور مسلمانان کشمیر یہ بات سمجھنے سے قاصر ہیں کہ ایک طرف جہاں جموں وکشمیر کی تمام عبادت گاہوں، معابد، آستانوں، امام باڑوں اور خانقاہوں کو نماز جمعہ کی ادائیگی کیلئے باضابطہ کھول دیا گیا ہے لیکن صرف مرکزی جامع مسجد پر نماز جمعہ کی ادائیگی کے لئے مسلسل پابندی اور قدغن جاری ہے جو حد درجہ افسوسناک اور ناقابل فہم ہے۔

بیان میں کہا گیاکہ ہم نے بار بار واضح کیا ہے کہ حکمرانوں کا یہ طرز عمل سراسر مداخلت فی الدین اور مسلمانوں کے مذہبی جذبات اور احساسات کو مجروح کرنے کے مترادف ہے جو ہرگز قابل قبول نہیں ہے۔

انجمن نے اپنے بیان میں کہا ہے:‘شہر و گام سے جو افراد مرد و خواتین اور بزرگ حضرات نماز جمعہ جیسے اہم فریضہ کی ادائیگی کے لئے جامع مسجد آنا چاہتے ہیں،لگاتارجامع مسجد بند رکھے جانے کے سبب ان میں شدید مایوسی اور بے چینی پائی جارہی ہے اور وہ حکمرانوں کے اس رویہ کو سراسر زیادتی اور انتقام گیری تصور کرتے ہیں۔بتادیں کہ سری نگر کے نوہٹہ علاقے میں واقع تاریخی جامع مسجد میں نماز جمعہ ادا نہیں کی جا رہی ہے۔

ذریعہ
یو این آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.