افغانستان کے عوام تک انسانی مدد بغیر کسی رکاوٹ کے پہنچے: جے شنکر

جے شنکر نے آر آئی سی کے وزرائے خارجہ کی 18ویں میٹنگ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آر آئی سی ممالک کو دہشت گردی، سخت گیری اور منشیات کی اسمگلنگ کے خطرات کے مدنظر اپنے اپنے نظریات سے کوآرڈی نیشن قائم کرنے کی ضرورت ہے۔

نئی دہلی: وزیر خارجہ ایس جئے شنکر نے جمعہ کو کہا کہ ہندوستان نے افغانستان کو پچاس ہزار ٹن گیہوں کی سپلائی کی پیشکش کی ہے اور روس۔ ہندوستان۔ چین (آر آئی سی) ممالک سے یہ یقینی کرنے کیلئے متحد ہوکر کام کرنے کی اپیل کی ہے جس سے افغانستان کے لوگوں تک انسانی مدد ’بغیر کسی رکاوٹ اور سیاست کے‘ پہنچے۔

جئے شنکر کا یہ تبصرہ اس وقت آیا جب پاکستان نے ہندوستان سے افغانستان میں پچاس ہزار ٹن گیہوں اور ادویات کو لے جانے والے ٹرکوں کے راستے میں رخنہ ڈالا اور پاکستان کے وزیراعظم عمران خان افغانستان کے اسلامی امارات کے چوٹی کے حکام کے ذاتی طورپر مداخلت کرنے کے بعد ٹرکوں کو گزرنے کی اجاز ت دینے پر رضامند ہوئے ہیں۔ عمران خان نے کہاکہ وہ ہندوستان کی طرف سے بھیجی گئی خاص کھیپ کو ’غیرمعمولی بنیاد‘ پر یہاں سے گزرنے دیں گے۔

 جے شنکر نے آر آئی سی کے وزرائے خارجہ کی 18ویں میٹنگ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آر آئی سی ممالک کو دہشت گردی، سخت گیری اور منشیات کی اسمگلنگ کے خطرات کے مدنظر اپنے اپنے نظریات سے کوآرڈی نیشن قائم کرنے کی ضرورت ہے۔ یہ اس سلسلہ میں بھی واضح ہے کہ پڑوسی ملک چین اقوام متحدہ سلامتی کونسل میں پاکستان میں مقیم دہشت گردوں کو نامزد کرنے کے لے ہندستان کی درخواست پر روک لگانے کی کوشش کرتا رہا ہے اور ہمیشہ پاکستان کا ساتھ دیتا رہا ہے۔ میٹنگ کے بعد وزیر خارجہ اگلے ایک سال کے لئے پپلز ری پبلک چین کے وزیر خارجہ کو آر آئی سی کی صدارت سونپیں گے۔

ذریعہ
یواین آئی

تبصرہ کریں

یہ بھی دیکھیں
بند کریں
Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.