سلمان خورشید کے خلاف شکایت ، ہندوتوا پر نامناسب تبصرہ کا الزام

سلمان خورشید کی کتاب کے صفحہ نمبر 113 پر کہا گیا ہے کہ ہندوتوا کی جدید شکل میں سادھوؤں اور سنتوں کے سناتن دھرم اور روایتی ہندوازم کو پس پشت ڈال دیا گیا ہے۔

نئی دہلی: دہلی کے ایک وکیل ونیت جندل نے کانگریس لیڈر سلمان خورشید کے خلاف آج پولیس میں شکایت درج کرائی۔ جندل نے اپنی شکایت میں کہا کہ سینئر کانگریس لیڈر اور سابق وزیر قانون سلمان خورشید نے حال ہی میں اپنی کتاب ”ایودھیا پر طلوع آفتاب: ہمارے دور میں قوم پرستی“ کا رسم اجراء کیا ہے جس میں ہندوتوا کاتقابل آئی ایس آئی ایس اور بوکوحرام جیسے انتہاپسند گروپس کے ساتھ کیا گیا ہے۔ یہ ریمارک اس کتاب کے ایک باب بعنوان ”زعفرانی آسمان“ میں کیا گیا ہے۔

کتاب کے صفحہ نمبر 113 پر کہا گیا ہے کہ ہندوتوا کی جدید شکل میں سادھوؤں اور سنتوں کے سناتن دھرم اور روایتی ہندوازم کو پس پشت ڈال دیا گیا ہے۔ یہ ہر معیار سے ایک سیاسی ورژن ہے جو حالیہ عرصہ میں آئی ایس آئی ایس اور بوکوحرام جیسے جہادی اسلام پسند گروپس کے مماثل ہے۔

 وکیل نے اپنی شکایت میں الزام عائد کیا کہ یہ نہ صرف اشتعال انگیز تبصرہ ہے بلکہ اس کی وجہ سے ہندو مذہب کے ماننے والوں کے جذبات بھی مشتعل ہوئے ہیں۔

ذریعہ
آئی اے این ایس

تبصرہ کریں

یہ بھی دیکھیں
بند کریں
Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.