لدھیانہ ڈسٹرکٹ کورٹ کامپلکس میں دھماکہ‘ 2 ہلاک

لدھیانہ کے پولیس کمشنر گرپریت سنگھ بھلر نے کہا کہ اس علاقہ کو مہربند کردیا گیا ہے۔ فارنسک ٹیمیں دھماکہ کے مقام سے نمونے لے رہی ہیں۔ بھلر نے ابتدائی تحقیقات سے متعلق سوال کا جواب دیتے ہوئے کہاکہ فی الحال اس پر کوئی تبصرہ کرنا بے حد دشوار ہے۔

لدھیانہ: شہر کے ایک ڈسٹرکٹ کورٹ کامپلکس کے اندر آج دھماکہ میں 2  افراد ہلاک اور دیگر 3 زخمی ہوگئے۔ پولیس نے بتایا کہ کورٹ کامپلکس کی دوسری منزل پر ایک واش روم کے اندر یہ دھماکہ ہوا۔ اُس وقت ڈسٹرکٹ کورٹ کام کررہا تھا۔ پولیس نے اس علاقہ کا محاصرہ کرلیا اور بچاؤ کارروائی جاری ہے۔ چیف منسٹر پنجاب چرنجیت سنگھ چنی نے کہا کہ وہ صورتِ حال کا جائزہ لینے لدھیانہ کا دورہ کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ بعض ملک دشمن اور ریاست دشمن طاقتیں ایسی حرکتیں کررہی ہیں۔ حکومت چوکس ہے‘ لوگوں کو بھی چوکس ہوجانا چاہئے۔ خاطیوں کو بخشا نہیں جائے گا۔ لدھیانہ کے پولیس کمشنر گرپریت سنگھ بھلر نے کہا کہ اس علاقہ کو مہربند کردیا گیا ہے۔ فارنسک ٹیمیں دھماکہ کے مقام سے نمونے لے رہی ہیں۔ بھلر نے ابتدائی تحقیقات سے متعلق سوال کا جواب دیتے ہوئے کہاکہ فی الحال اس پر کوئی تبصرہ کرنا بے حد دشوار ہے۔ تحقیقات جاری ہیں۔

 آئی اے این ایس کے بموجب کورٹ کامپلکس‘ ڈسٹرکٹ کمشنر کے دفتر کے قریب ہی واقع ہے۔ دھماکہ 12:20 بجے دن ہوا۔ وکلاء کی ہڑتال کے سبب اُس وقت وہاں زیادہ لوگ موجود نہیں تھے۔ ایک زخمی کی ایڈوکیٹ آر ایس ماند کی حیثیت سے شناخت ہوئی ہے۔

 دھماکہ اتنا شدید تھا کہ قریبی دیواریں تباہ ہوگئیں اور کھڑکیوں کے شیشے چکناچور ہوگئے۔ سابق چیف منسٹر کیپٹن امریندر سنگھ نے کہا ہے کہ پولیس کو اس کیس کی تہہ تک پہنچنا چاہئے۔ میں زخمیوں کی عاجلانہ صحت یابی کی دعا کرتا ہوں۔ 2  افراد کی ہلاکت کی اطلاع پر بے حد صدمہ پہنچا۔

ذریعہ
پی ٹی آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.