حج 2022 کا اعلان، 31 جنوری درخواستیں داخل کرنے کی آخری تاریخ : نقوی

واضح رہے کہ کوروناوباء کی وجہ سے دوسال سے سعودی عرب کے علاوہ کسی ملک سے عازمین کو اجازت نہیں دی گئی تھی لیکن 2022 میں حج ممکن ہوسکے گا۔ نقوی نے کہا کہ حج کا عمل صد فیصد ڈیجیٹل / آن لائن ہوگا۔

ممبئی۔ : مرکزی وزیر برائے اقلیتی امور اور ڈپٹی لیڈر راجیہ سبھا مختار عباس نقوی نے ممبئی میں حج 2022کا اعلان کرتے ہوئے آج کہاکہ اس بار سے موبائل ایپ پر اورملک بھرکے وقف دفاتر میں بھی درخواستیں دی جاسکیں گی اور ملک بھر سے 10مقامات سے عازمین، فریضہ حج کے لیے روانہ ہوں گے۔31 جنوری 2022 تک درخواستیں وصول کی جائیں گی۔

واضح رہے کہ کوروناوباء کی وجہ سے دوسال سے سعودی عرب کے علاوہ کسی ملک سے عازمین کو اجازت نہیں دی گئی تھی لیکن 2022 میں حج ممکن ہوسکے گا۔ نقوی نے کہا کہ حج کا عمل صد فیصد ڈیجیٹل / آن لائن ہوگا۔

درخواستیں آن لائن اور جدید سہولتوں پر مشتمل‘حج موبائل ایپ’کے ذریعہ بھی کی جا سکیں گی۔ انہوں نے کہا کہ اِس بار ہندوستانی عازمین حج بھی ”ووکل فار لوکل“ کی حوصلہ افزائی کریں گے اور سوَدیشی سامان کے ساتھ عازمین حج لازمی سفر حج پر روانہ ہوں گے۔

حج کے خواہشمند افراد کے انتخاب کا عمل کورونا وائرس کی دونوں ویکسین کی دونوں خوراک لئے جانے اور ہندوستان اور سعودی عرب کی حکومتوں کے ذریعہ حج 2022کے اوقات طے کئے جانے والے کورونا پروٹوکول‘ ہدایات اور قواعد وَ ضوابط کے تحت ہو گا۔ نقوی نے کہا کہ حج موبائل ایپ کو اَپ گریڈ کیا گیا ہے۔

اِس کا ٹیگ لائن‘حج ایپ اِن یور ہینڈ ہے۔ حج موبائل ایپ’میں درخواست فارم اور اس کو بھرنے کی مکمل معلومات‘ درخواست فارم بھرنے کے عمل کا ویڈیو وغیرہ بھی موجود ہے۔ انہوں نے کہا کہ حج کیلئے 10 مراکزِ روانگی طے کئے گئے ہیں جِن میں احمدآباد‘ بنگلورو‘ کوچی‘ دہلی‘ گوہاٹی‘ حیدرآباد‘ کولکتہ‘ لکھنو‘ ممبئی اور سری نگر شامل ہیں۔

انہوں نے کہا کہ سبھی عازمین حج کو ڈیجیٹل ہیلت کارڈ، اِی۔ مسیحا صحت کی سہولت، مکّہ۔مدینہ میں قیام / رہائش کی عمارتوں ٹرانسپورٹیشن کی معلومات ہندوستان میں ہی فراہم کرانے والی اِی۔ ٹیگنگ’کی سہولت بھی دی جائے گی۔

ذریعہ
یو این آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.