لکھیم پور تشدد معاملے کا اصل ملزم آشیش مشرا گرفتار

ڈپٹی انسپکٹر جنرل پولیس اپیندر اگروال نے رات گئے صحافیوں کو بتایا کہ آشیش تفتیش میں پولیس کے ساتھ تعاون نہیں کر رہا تھا اور نہ ہی کئی سوالوں کے جواب دے رہا تھا۔ اس لیے اسے گرفتار کیا گیا ہے۔

لکھیم پور کھیری: اتر پردیش کے لکھیم پور کھیری کے تیکونیا میں گذشتہ اتوار کے روز تشدد میں آٹھ افراد کی ہلاکت کے معاملے میں پولیس کی کرائم برانچ نے مرکزی وزیر مملکت برائے داخلہ اجے مشرا ٹینی کے بیٹے آشیش مشرا عرف مونو کو تقریباً 12 گھنٹے کی لمبی پوچھ گچھ کے بعد گرفتار کرلیا۔

ڈپٹی انسپکٹر جنرل پولیس اپیندر اگروال نے رات گئے صحافیوں کو بتایا کہ آشیش تفتیش میں پولیس کے ساتھ تعاون نہیں کر رہا تھا اور نہ ہی کئی سوالوں کے جواب دے رہا تھا۔ اس لیے اسے گرفتار کیا گیا ہے۔ اس کا میڈیکل کرانے کے بعد اسے عدالت میں پیش کیا جائے گا اور اسے پوچھ گچھ کے لیے پولیس ریمانڈ میں لینے کی اپیل کی جائے گی۔

آشیش ہفتہ کی صبح 10:38 بجے کرائم برانچ کے افسران کے سامنے پیش ہوا تھا۔ وہ سیکوریٹی کے ذریعے پولیس لائن پہنچا اور میڈیا کے افراد کو چکمہ دیتے ہوئے پچھلے گیٹ سے داخل ہوا۔

ایس آئی ٹی کی ٹیم نے صبح 11 بجے اس سے پوچھ گچھ شروع کی۔ تقریبا 12 گھنٹے کی طویل پوچھ گچھ کے بعد ڈی آئی جی نے تقریباً پونے گیارہ بجے باہر نکل کر صحافیوں کو آشیش کی گرفتاری کاباضابطہ اعلان کیا۔

ذریعہ
یو این آئی

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.