اومیکرون خطرہ کا سامنا کرنے حکومت تیار: ہریش راؤ

انہوں نے عوام پر زور دیا کہ وہ ماسک کا استعمال کریں۔ دو گز کی دوری کے اصول پر سختی کے ساتھ عمل کریں تب ہی ہم وائرس کو پھیلنے سے روک سکتے ہیں۔ ہریش راؤ نے گاندھی ہاسپٹل میں 2کروڑ روپے کے مصارف سے عصری سی ٹی اسکیان مشین کے افتتاح کے بعد یہ بات کہی۔

حیدرآباد: ریاستی وزیر صحت ٹی ہریش راؤ نے آج کہا کہ تلنگانہ میں تاحال اومیکرون کا ایک بھی کیس سامنے نہیں آیا ہے تاہم حکومت، مستقبل قریب میں کورونا وائرس کی اس نئی شکل اومیکرون کے خطرہ سے نمٹنے کیلئے مکمل تیار ہے۔ بیرونی ممالک سے آنے والے دو مسافرین کے خون کے نمونوں کو جینوم سیکونیسنگ روانہ کیا گیا ہے تاہم ابھی تک ان دونوں کی رپورٹ نہیں آئی ہے۔

انہوں نے عوام پر زور دیا کہ وہ ماسک کا استعمال کریں۔ دو گز کی دوری کے اصول پر سختی کے ساتھ عمل کریں تب ہی ہم وائرس کو پھیلنے سے روک سکتے ہیں۔ ہریش راؤ نے گاندھی ہاسپٹل میں 2کروڑ روپے کے مصارف سے عصری سی ٹی اسکیان مشین کے افتتاح کے بعد یہ بات کہی۔

انہوں نے کہا کہ حکومت نے شہر کے اس بڑے عوامی دواخانہ (گاندھی ہاسپٹل) میں عصری طبی آلات مہیا کرائے ہیں۔ راؤ نے عوام کے تمام طبقات سے اپیل کی کہ وہ بعجلت ممکنہ کورونا ویکسین لیں تاکہ مستقبل میں ممکنہ مشکلات سے بچاجاسکے۔ کووڈ مریضوں کو بہتر خدمت اور معیاری علاج فراہم کرنے پر انہوں نے گاندھی ہاسپٹل کے طبی ونیم طبی عملہ کی ستائش کی اور کہا کہ اس ہاسپٹل میں آئندہ 6ماہ کے دوران19کروڑ روپے کے مصارف سے مزید عصری طبی آلات دستیاب کرائے جائیں گے۔

انہوں کہا کہ کورونا کی دونوں لہروں کے دوران گاندھی ہاسپٹل میں کووڈ مریضوں کا بہتر علاج کیا گیا۔ انہوں نے توقع ظاہر کی کہ شہر اور اس کے اطراف واکناف کے عوام اس مفت معیاری طبی خدمات سے بھر پور استفادہ کریں گے۔ ڈاکٹروں اور محکمہ صحت کے عہدیداروں کے درمیان تال میل بہتر رہا ہے۔ وزیر صحت نے مزید کہا کہ گاندھی ہاسپٹل کے احاطہ میں بہت جلد مدراینڈ چائلڈ کئیر ہاسپٹل (ایم سی ایچ) کا قیام عمل میں لایا جائے گا۔

اس یونٹ میں مزید200بستروں کی گنجائش میں اضافہ کرنے پر غور کیا جارہا ہے۔ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ کے تعاون اور حوصلہ افزائی سے گاندھی ہاسپٹل مسلسل ترقی کررہا ہے۔ انہوں نے ڈاکٹروں، نیم طبی عملہ اور محکمہ صحت کے عہدیداروں پر زور دیا کہ وہ اس ہاسپٹل سے رجوع ہونے والے مریضوں کے بہتر علاج ومعالجہ کیلئے کوئی کسر باقی نہیں رکھیں۔

نمائندہ منصف کے مطابق وزیر صحت وفینانس ٹی ہریش راؤ نے کہا کہ کورونا کی نئی قسم اومیکرون سے عوام کو خوفزد ہ ہونے کی کوئی ضرورت نہیں ہے۔ اومیکرون کے خطرہ سے نمٹنے کیلئے حکومت بالکل تیار ہے۔ انہوں نے کہا کہ جو کھم ممالک سے اب تک 3235مسافرین حیدرآباد ایر پورٹ پہنچے ہیں جن میں سے صرف15مسافرین کا کووڈ ٹسٹ پازیٹیو آیا ہے۔

ان 15 مسافرین کے خون کے نمونوں کو جینوم سیکونیسنگ کیلئے روانہ کیا گیا ہے۔ ہریش راؤ نے گاندھی ہاسپٹل میں سی ٹی اسکیان مشین کے افتتاح کے بعد یہ بات کہی۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے ریاست بھر کے سرکاری دواخانوں میں 21 سی ٹی اسکیان مشینوں کی منظوری دی ہے۔

وہ گذشتہ 2برسوں سے غیر کارکرد کیاتھ لیابس کے بارے میں عہدیداروں سے مشاورت کرچکے ہیں۔ ان کیاتھ لیابس کی عنقریب دوبارہ کشادگی کے اقدامات کئے جائیں گے۔ اس موقع پر ریاستی وزراء محمد محمود علی، ٹی سرینواس یادو اور دیگر موجود تھے۔

ذریعہ
منصف نیوز بیوروآئی اے این ایس

تبصرہ کریں

Back to top button

Adblocker Detected

Please turn off your Adblocker to continue using our service.