دسویں جماعت کے طلبہ شراب پیتے ہوئے کیمرے میں قید

بی سی بوائز ریسیڈنشیل اسکول دنڈے پلی کے طلبہ جو ایک پارٹی میں مزے اڑارہے تھے، کی تصاویر سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئیں جس کے بعد عہدیداروں نے اس واقعہ کی تحقیقات کا حکم دے دیا ہے۔

حیدرآباد: ضلع منچریال کے ایک سرکاری اسکول میں زیر تعلیم دسویں جماعت کے طلبہ، بریانی کھانے کے دوران بیرپیتے ہوئے کیمروں میں قید ہوگئے۔

بی سی بوائز ریسیڈنشیل اسکول دنڈے پلی کے طلبہ جو ایک پارٹی میں مزے اڑارہے تھے، کی تصاویر سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئیں جس کے بعد عہدیداروں نے اس واقعہ کی تحقیقات کا حکم دے دیا ہے۔

ان طلبہ کو ہاسٹل روم کے فرش پر بیٹھا ہوا دیکھا جاسکتا ہے اور یہ طلبہ جن کے سامنے بیر کی ایک ایک بوتل رکھی ہوئی دیکھی جاسکتی ہے،مزے لے کر غذا کھارہے تھے اسکولی عہدیداروں کی جانب سے کی گئی ابتدائی تحقیقات میں پتہ چلا کہ یہ طلبہ، گرمائی تعطیلات کے آغاز سے قبل17/ اپریل کی شب فیئرویل پارٹی منارہے تھے۔

ہاسٹل وارڈن کی اجازت کے بعد طلبہ نے اس پارٹی کا اہتمام کیا تھا۔ موضع کے اپنے دوستوں کی مدد سے شراب کوباہر سے لایا گیا تھا۔طلبہ نے ہاسپٹل کے میس میں چکن بریانی تیار کرائی اور بریانی کو اپنے رومس میں لے گئے اور باہر سے شراب منگوائی گئی تھی۔

یہ واقعہ اس وقت منظر عام پر آیا جبکہ چند بچوں نے سیلفی لی اور اس سیلفی کو اپنے دوستوں کو پوسٹ کیا جس کے بعد آئی ٹی کے ماہرین نے ضلع کلکٹر اور دیگر ضلعی عہدیداروں کو ٹیاگ کرتے ہوئے تصاویر کو سوشل میڈیا پروائرل کردیا۔

ضلع بی سی ویلفیر آفیسر خواجہ نظام علی افسر نے اس واقعہ کی تحقیقات کا حکم دے دیا ہے،ان کی ہدایت پر بی سی ڈیولپمنٹ آفیسر ڈی بھاگیہ وتی نے کل ہاسٹل کا دورہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ وارڈن، اپنے فرائض کو انجام دینے میں ناکام رہے ہیں ان کے خلاف مناسب کاروائی کی جائے گی۔

انہوں نے کہا کہ اس معاملہ کی انکوائری کا حکم دے دیا گیا ہے۔ رپورٹ وصول ہونے کے بعد اس واقعہ میں ملوث طلبہ کے خلاف کاروائی کی جائے گی۔ بتایا جاتا ہے کہ وارڈن کی جانب سے صحیح طور پر مانیٹرنگ نہ کرنے کی وجہ سے طلبہ نے حدود سے تجاوز کیا ہے ریسیڈنشیل اسکول، ایک کرایہ کی عمارت میں کارکرد ہے۔ اس کے طراف مکانات ہیں۔ طلبہ نے مقامی بچوں سے دوستی کرلی اور ان کی مدد سے بیر منگواکر پینا شروع کردیا۔

تبصرہ کریں

Back to top button