دنیا میں کوئی بھی پارٹی بی جے پی کی طرح جھوٹ نہیں بولتی: اکھلیش

یہ وہی لوگ ہیں جنہوں نے کہا تھا کہ جو ہوائی چپل پہنتے ہیں وہ طیارہ کے ذریعہ سفر کرسکیں گے لیکن اب وہ طیاروں کو اور ایرپورٹس کو فروخت کررہے ہیں۔

وارناسی (یوپی): سماج وادی پارٹی صدر اکھلیش یادو نے جمعرات کو یہ دعویٰ کیا کہ دنیا میں کوئی سیاسی پارٹی بی جے پی اور اُس کے قائدین کی طرح جھوٹ نہیں بولتے اور انہوں نے گزشتہ 5 برسوں سے روزگار کا انتظار کرنے والے نوجوانوں کے تعلق سے پارٹی کو تنقید کا نشانہ بنایا کیونکہ وہ حکومت کے جائیدادوں کو فروخت کرنے میں مصروف ہے۔

وارناسی میں اترپردیش اسمبلی انتخابات کے لئے ایس پی زیر قیادت اپوزیشن اتحاد کی ایک مشترکہ بڑی ریالی سے خطاب کرتے ہوئے یادو نے کہا کہ یہ الیکشن اُن لوگوں کے خلاف ہیں جو ہوائی باتیں کیوٹو بمقابلہ بنارسی ووٹر سے کرتے ہیں۔

بی جے پی کا یہ دعویٰ ہے کہ وہ دنیا کی سب سے بڑی سیاسی پارٹی ہے اور یہ بھی دعویٰ ہے کہ اُس نے بیشتر اراکین کے لئے مس کال مہم چلائی ہے لیکن ڈبل انجن کی میعاد جو ہم نے دیکھی ہے، میں یہ دعویٰ کرسکتا ہوں کہ کرہ ارض پر کوئی اور دیگر پارٹی نہیں ہے جیسا بی جے پی یا اُس کے قائدین ہیں۔

اُس نے کسانوں سے کہا کہ اُن کی آمدنی دگنی ہوجائے گی کیا دگنی ہوئی ہے؟۔ کیا نوجوانوں کو گزشتہ 5 برسوں سے روزگار کے لئے انتظار نہیں کرنا پڑ رہا ہے؟۔

یہ وہی لوگ ہیں جنہوں نے کہا تھا کہ جو ہوائی چپل پہنتے ہیں وہ طیارہ کے ذریعہ سفر کرسکیں گے لیکن اب وہ طیاروں کو اور ایرپورٹس کو فروخت کررہے ہیں۔

انہوں نے بندر گاہوں کو بھی فروخت کردیا ہے۔ ہندی محاورہ کو استعمال کرتے ہوئے ”نہ رہے گا بانس، نہ بجے کی بانسری“ سماج وادی پارٹی سربراہ نے کہا کہ جب تمام پی ایس یوز اور سرکاری جائیدادیں فروخت کردی جائیں گی، تب عوام کیسے روزگار حاصل کرپائیں گی۔ یہ انتخابات ہندوستان کے دستور اور جمہوریت کو بچانے کے لئے ہے۔ انہوں نے یہ بات کہی۔

تبصرہ کریں

Back to top button