راج شیکھر ریڈی عوام کے دلوں میں زندہ ہیں: وائی ایس شرمیلا

وائی ایس شرمیلا نے کہاکہ سابق چیف منسٹر آنجہانی ڈاکٹر راج شیکھر ریڈی، آج بھی تلنگانہ عوام کے دلوں میں زندہ ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ ان کی دختر شرمیلا کو تلنگانہ عوام کا پیار مل رہا ہے جس سے ٹی آر ایس حکومت پریشان ہے۔

حیدرآباد: وائی ایس آر تلنگانہ پارٹی کے بانی وصدر وائی ایس شرمیلا کی پدیاترا کو تلنگانہ عوام کی زبردست پذیرائی مل رہی ہے جس کی وجہ سے ٹی آ رایس حکومت پر خوف طاری ہورہا ہے۔ سابق چیف منسٹر آنجہانی ڈاکٹر راج شیکھر ریڈی، آج بھی تلنگانہ عوام کے دلوں میں زندہ ہیں۔

 یہی وجہ ہے کہ ان کی دختر شرمیلا کو تلنگانہ عوام کا پیار مل رہا ہے جس سے ٹی آر ایس حکومت پریشان ہے۔ شہر حیدرآباد میں آج میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے شرمیلا نے کہا کہ ریاست میں اگر وسط مدتی انتخابات ہوتے ہیں تو کے سی آر، عوام کی برہمی کا سامنا نہیں کرپائیں گے۔

 انہوں نے کہا کہ جن علاقوں میں وہ پدیاترا کرچکی ہیں وہاں، عوام، وائی ایس آر سی پی کی تائید میں ہیں۔ ان علاقوں میں انہیں عوام کی تائید اس لئے ملی کیونکہ راج شیکھر ریڈی، ہنوز ان علاقوں کے عوام کے دلوں میں زندہ ہیں۔ ڈاکٹر راج شیکھر ریڈی نے غریبوں کی بہبود اور ان کی ترقی کیلئے جو اقدامات کئے ہیں اس وجہ سے آنجہانی قائد کو عوام ہنوز نہیں بھول پائے ہیں۔

ٹی آر ایس میں کرپشن کے بارے میں انہوں نے کہا کہ ٹی آر ایس کے اکاونٹ میں 860 کروڑ روپے ہیں۔اس سے اندازہ لگایا جاسکتا ہے کہ پارٹی کے قائدین کے اکاونٹس میں کتنی رقم ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ سرکاری خزانہ خالی ہے، عوام کی بہبود اور ملازمین کی تنخواہوں کی ادائیگی کیلئے کچھ بھی نہیں ہے۔

یہ تمام چیزیں کے سی آر کی ناقص حکمرانی کو عیاں کرتی ہیں۔ شرمیلا نے سوال کیا کہ سرمایہ آنے کے باوجود ریاست سے بیروزگاری ختم کیوں نہیں ہورہی ہے۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ راجیہ سبھا کے ٹکٹ اُن قائدین کو دئیے گئے جنہوں نے بھاری رقم دی ہے۔

تبصرہ کریں

Back to top button