راج پکسے خاندان سے کوئی صدر تو کیا ایم پی بھی نہیں بن سکتا: وکرماسنگھے

وزیر اعظم نے ملک کے میڈیا اداروں پر الزام لگایا کہ وہ راج پکسے خاندان کے افراد کو’ہیرو‘ بنا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا ’’انہیں میڈیا کے ذریعے لایا گیا تھا۔

کولمبو: سری لنکا کے نئے وزیر اعظم رانل وکرما سنگھے نے کہا ہے کہ راج پکسے خاندان کا کوئی فرد ملک کا صدر تو کیا ایک رکن پارلیمنٹ بھی نہیں بن سکتا۔

دی آئی لینڈ‘ اخبار نے وکرما سنگھے کے حوالے سے بی بی سی سنہالا سروس کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ موجودہ صورتحال میں اقتدار میں یا باہر کوئی بھی راج پکسے سے ایک بار پھر پارلیمنٹ میں داخل ہونے کی توقع نہیں کر سکتا، صدر بننے کی بات تو چھوڑ ہی دیں۔

انہوں نے یہ بات اس الزام کے جواب میں کہی ہے کہ ’راج پکسے خاندان کے وقار کو برقرار رکھنے‘ کے لیے، انہیں (وکرماسنگھے کو) اس وقت تک وزیر اعظم مقرر کیا گیا ہے جب تک کہ راج پکسے خاندان کا کوئی اور فرد اگلے صدارتی انتخاب میں حصہ نہیں لیتا۔

وزیر اعظم نے ملک کے میڈیا اداروں پر الزام لگایا کہ وہ راج پکسے خاندان کے افراد کو’ہیرو‘ بنا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا ’’انہیں میڈیا کے ذریعے لایا گیا تھا۔ میں انہیں نہیں لایا، اس لیے جا کر میڈیا سے پوچھ لیں، جا کر سری لنکن میڈیا سے پوچھیں کہ انہیں واپس لایا گیا تھا یا نہیں۔ آپ میری طرف کیوں دیکھ رہے ہیں؟ میں نے کچھ غلط نہیں کیا۔‘‘

انہوں نے مزید کہا ’’میں نے ان کے خلاف 380 کے قریب کیس دائر کیے، میرے خیال میں، تقریباً 300 فائلیں ہیں۔ میں نے انہیں کبھی ہیرو نہیں کہا۔ مجھے کوئی ایک میڈیا آرگنائزیشن بتائیں جس نے گوتابایا راج پکسے کو ووٹ نہ دینے کو کہا ہو۔ تو براہ کرم جا کر اس سے پوچھیں۔‘‘

انہوں نے کہا ’’جب میں نے کہا کہ ہمیں اگلے دو سالوں کے لیے سات ارب ڈالر کی ضرورت ہے۔ جب میں نے کہا کہ مجھے مغرب جا کر آئی ایم ایف میں جھوٹا کہا گیا۔ مین اسٹریم میڈیا اور سوشل میڈیا نے مجھے برباد کر دیا، تو آخر میں میں نے جو کہا وہ درست تھا، تو مجھ سے مت پوچھو کہ میں نے کیا کیا۔ میں نے ملک کی یہ حالت نہیں بنائی۔

وکرماسنگھے نے مزید کہا ’’جب انہیں دوبارہ اقتدار میں لایا گیا تو میڈیا نے کہا کہ ان کے خلاف یہ مقدمات جھوٹے ہیں۔ آپ وہ سوال پوچھنے سے ڈرتے ہیں جو میڈیا کو مجھ سے پوچھنے کی ضرورت ہے۔ براہ کرم انکوائری کے لیے میڈیا کے پاس جائیں۔ میں نے (راج پکسے) کی مدد نہیں کی۔

رانل وکرما سنگھے کو اس وقت سری لنکا کا نیا وزیراعظم نامزد کیا گیا ہے جب مہندا راج پکسے نے ایک ہفتہ قبل سری لنکا میں شدید معاشی بحران اور حکومت مخالف مظاہروں کے درمیان وزیر اعظم کے عہدے سے استعفیٰ دے دیا تھا۔

تبصرہ کریں

Back to top button