شاہین باغ میں عوام نے غیرقانونی فولادی ڈھانچہ ہٹادیا

شاہین باغ میں پیر کے دن عوام نے خود ایک عمارت کے روبرو واقع غیرقانونی قبضہ ایک فولادی ڈھانچہ ہٹادیا۔ جبکہ جے سی بی بلڈوزر استعمال نہیں کئے گئے۔

نئی دہلی: شاہین باغ میں پیر کے دن عوام نے خود ایک عمارت کے روبرو واقع غیرقانونی قبضہ ایک فولادی ڈھانچہ ہٹادیا۔ جبکہ جے سی بی بلڈوزر استعمال نہیں کئے گئے۔

مقامی افراد نے کہاکہ عمارت کے روبرو قائم کیاگیا فولادی ڈھانچہ ایک غیرقانونی قبضہ نہیں تھا۔ ایک مقامی شخص نے کہاکہ یہ عمارت کی تزائین نو کے لئے نصب کیاگیاتھا۔

عام آدمی پارٹی کے رکن اسمبلی امانت اللہ خان جو مقام واقعہ پر موجود تھے‘ عہدیداروں کے ساتھ بات چیت کرتے ہوئے دیکھے گئے۔ انہوں نے کہاکہ قبضے کہاں ہیں؟

میں نے خود دو‘ تین دن قبل تمام قبضے برخاست کئے۔ رکن اسمبلی نے کہاکہ انہوں نے سارے علاقہ کا معائنہ کیا اور ہر عہدیدار سے بات چیت کی جن میں ٹریفک پولیس کے عہدیدار بھی شامل ہیں۔ میں نے خود ایک مسجد کے باہر غیرقانونی طور پر بنایا گیا ٹائیلٹ برخاست کیا۔ یہ صرف انتقامی سیاست ہے۔

مجھے بتائیے کہ قبضے کہاں ہیں۔ اگر اب بھی وہاں غیرقانونی ڈھانچہ ہے تو مجھے اطلاع دیجئے میں خود اسے ہٹادوں گا۔ واضح رہے کہ دہلی کا شاہین باغ علاقہ نومبر 2019 تا مارچ2020 کے دوران شہریت قانون ترمیمی ایکٹ سی اے اے کے خلاف احتجاج کا مرکز بن گیاتھا۔

تبصرہ کریں

Back to top button